انڈونیشین صدر پاکستان کا 2 روزہ دورہ مکمل کرکے واپس روانہ:دفتر خارجہ

اسلام آباد:دفتر خارجہ کے مطابق انڈونیشین صدر پاکستان کا دو روزہ مکمل کرکے وطن واپس روانہ ہوں چکے ہیں ،دو روزہ سرکاری دورے پر انہوں نے صدر مملکت ممنون حسین اور وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی سے اہم ملاقاتیں کیں،انڈونیشیا کے صدر نے افغان مسئلے کے سیاسی حل پر زور دیا اور کہا کہ ہمارا ملک بھی افغان امن و مفاہمتی عمل میں تعاون کرے گا جبکہ پاکستان نے ان کے اس جذبے کا خیرمقد م کیا ہے ۔دفتر خارجہ کے مطابق انڈونیشن صدرجوکو ڈیوڈو پاکستان کادو روزہ سرکاری دورہ مکمل کرکے واپس جاچکے ہیں ،صدر مملکت نے انہیں رخصت کیا۔دفتر خارجہ کے مطابق صدر ممنون حسین نے انڈونیشین صدر کے اعزاز میں عشائیہ دیا اور انہوں نے پارلیمان کے مشترکہ اجلاس سے خطاب بھی کیا۔مہمان صد ر اوروزیراعظم شاہد خاقان عباسی میں اہم ملاقات ہوئی جس میں وزیر اعظم نے ان کو بھارت سے بہتر تعلقات،مسئلہ کشمیر کے حل کیلیے اقدامات کا ذکر کیا،جبکہ صدر مملکت اور وزیراعظم نے پاکستانی شہری ذوالفقار کی رہائی اور وطن واپسی کامعاملہ بھی اٹھایا۔دفتر خارجہ کے مطابق پاک انڈونیشیاتجارتی عدم توازن میں بہتری کیلیے اقدامات ناگزیر ،جبکہ دوطرفہ سرمایہ کاری اور اقتصادی تعاون بڑھانے پر بھی اتفاق،جبکہ باہمی تجارتی حجم گزشتہ 3 سال میں 2 ارب ڈالربڑھنے پراظہاراطمینان اورانڈونیشیاکی آسیان میں پاکستان کی بحیثیت ڈائیلاگ پارٹنر شمولیت کی مکمل حمایت کافیصلہ ہوا ہے۔دونوں ممالک مشترکہ مفادات کے تحفظ کیلیے تعاون بڑھانے پر رضامند، پاکستان، انڈونیشیاانسداد دہشتگردی تربیت اور تعاون بڑھانے پر بھی رضامند اوراسٹریٹجک مواصلاتی تعاون بڑھانے پر بھی زور دیا گیا۔ دفتر خارجہ کے مطابق دفاعی تعاون معاہدے کے تحت مشترکہ کمیٹی قائم کی جائے گی جبکہ انڈونیشین صدر نے سی پیک منصوبے کا خیرمقدم کیا۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.