بھارت جس زبان میں چاہتا ہے پاکستان جواب دینے کیلئے تیار ہے ,ڈاکٹر محمد فیصل

ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل نے کہا کہ بھارتی آرمی چیف موجودہ صورت حال سے گھبراہٹ کا شکار ہوگئے ہیں ، آرمی چیف میڈیا پر نہیں بولتا، مگر وہ اپنی گھبراہٹ اور خوف کی وجہ سے میڈیا پر بولنے پر مجبور ہوگئے ہیں، بھارت جس زبان میں چاہتا ہے پاکستان جواب دینے کیلئے تیار ہے۔ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل نے کہا کہ بھارت کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کو کچلنے کیلئے ہر حربہ استعمال کر رہا ہے۔ برہان الدین وانی کی شہادت کے بعد بھارتی مظالم نئی نہج پر پہنچ گئے ہیں اور مقبوضہ کشمیر میں معصوم شہریوں کے خلاف پیلٹ گنز کا اندھا دھند استعمال کیا جا رہا ہے۔ بین الاقوامی اداروں نے بھی بھارتی مظالم کی مذمت کی ہے، ان مظالم کے باوجود اسے رتی بھر فائدہ حاصل نہیں ہوا، مقبوضہ کشمیر کے لوگوں کو اقوام متحدہ کی قرادادوں کے مطابق اپنا فیصلہ خود کرنے کا اختیار دیا جائے۔ بھارتی آرمی چیف میڈیا پر آکر بیان بازی کرتے ہیں جو کلبھوشن یادیو کی گرفتاری کے بعد ان کی گھبراہٹ کا ثبوت ہے۔ پاکستان چاہتا ہے کہ بھارت کے ساتھ تمام مسائل کو مذاکرات اور بات چیت کے ذریعے حل کئے جائیں، لیکن اگر بھارت کسی دوسری زبان میں بات کرنا چاہتا ہے تو ہم اس کے لئے بھی تیار ہیں۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.