اہم خبرِیں
سشانت سنگھ کے بعد اب ایک اور بھارتی اداکار کی خودکشی میڈیا کو پھانسی دینی چاہیے، نعمان اعجاز کا ڈرامہ انڈسٹری پر غص... معروف کامیڈین اور اداکارہ روبی انعم کو دل کا دورہ، اسپتال منتق... پی سی بی کا سلیم ملک اور سابق لیگ اسپنر دانش کنیریا پر عائد پا... کھلاڑیوں کوخود ہی ایک دوسرے کی حوصلہ افزائی کرنی ہو گی، مشتاق ... ویسٹ انڈیز کے مایہ ناز فاسٹ بولر مائیکل ہولڈنگ نسلی تعصب پر با... اعلیٰ ترک عدالت نے 'آیا صوفیہ' کی میوزیم کی حیثیت ختم کر دی 8 پولیس اہلکاروں کے قتل میں ملوث گینگسٹر انکاؤنٹر میں ہلاک چینی برانڈ 'شین' کی جائے نماز کو سجاوٹی قالین فروخت کرنے پر مع... الیکشن سے پہلے جھاڑو پھر جائے گا، شیخ رشید سینیٹر سرفراز بگٹی کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری سرکاری ملازمین کو ایڈوانس تنخواہ جاری کرنےکی منظوری اسپیکر قومی اسمبلی کی کورونا کو شکست ،لیکن کیسے؟ سنتھیا رچی کا اپنے کیس میں عدالت پر اعتماد کا اظہار دو سال میں عمران خان ملک کا فائدہ نہیں کر سکے :طاہر عزیز خان ک... چوہدری شجاعت کے فضل الرحمان کے دھرنے سے متعلق اہم انکشافات پولٹری فیڈ کیس، چیف جسٹس اطہر من اللہ اور اعتزاز احسن میں دلچ... 'ہوگو باس' کا اسپورٹس وئیر کی تیاری کے لیے پاکستانی کمپنی کو ... ریور راوی فرنٹ اتھارٹی کے قیام کی منظوری لڑکی سے ملاقات پر نوجوان کے بال، بھنویں اور مونچھیں کاٹ دی گئی...

لیجنڈری اداکار سنتوش کمار کو مداحوں سے بچھڑے 37 برس بیت گئے

پاکستانی فلم انڈسٹری کے تاریخ ساز ہیرو سنتوش کمار کی 37 ویں برسی آج منائی جا رہی ہے۔ملائم اور دھیمے لہجے میں جذبوں کا حقیقت کے قریب تر اظہار کرنے والے موسٰی رضا المعروف سنتوش کمار اپنے فن سے مالا مال خاندان کے سربراہ تھے، یہ فیملی سنتوش کمار،صبیحہ خانم،درپن،نئیرسلطانہ،ایس سلیمان،پنا اور منصور جیسے ہیروں سے مزین تھی جو فلمی افق پر ستارے بن کر جگمگائے رہے۔سنتوش کمار نے جہاں اپنے فلمی کرداروں کوبہترین پرفارمینس سے لازوال بنایا وہیں انہوں نے اپنے لب و لہجے، رکھ رکھاوی، تہذیب اور اخلاق سے بھی لوگوں کو اپنا گرویدہ بنایا۔ لوگ آج بھی سنتوش کمار کو انہی اوصاف کی وجہ سے یاد کرتے ہیں۔یوں تو سنتوش کمار نے وقت کی دلکش اور حسین ادکاراویں کے مقابل کام کیا لیکن صبیحہ خانم کے ساتھ فلمی محبت کا اظہار کرتے کرتے وہ انہیں سچ مچ دل دے بیٹھے، محبت کے عہد و پیمان ہوئے اور دونوں فلمی کے بعد حقیقی جوڑی بن گئے جو مرحوم کے آخری سانس تک قائم رہی۔سنتوش کمار کے فن، وجاہت اور شخصیت کا ایک زمانہ مداح تھا، ان جیسا عروج بہت کم اداکاروں کو نصیب ہوا۔1950 سے 1982 تک چوراسی فلموں میں اپنی اداکاری کے جوہر دکھانے والاپاکستان کا یہ تاریخ ساز فنکار 11 جون 1982 کو56 سال کی عمر میں انتقال کر گیاتاہم سنتوش کمار کا فن اور اعزازات ہمیشہ پاکستانی فلم انڈسٹری کی تاریخ کا حصہ رہیں گے۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.