زینب کے والد نے وزیراعلیٰ پنجاب کو 8نکاتی مطالبہ پیش کر دیا

قصور:  ننھی زینب کے والد محمد امین انصاری نے اپنی بےٹی زینب کا سے سپریم کورٹ میں لڑ نے کے لئے اپنا وکیل 10روپے فیس میں مقرر کر دیا اور وزیر اعلی پنجاب کو 8نکاتی
مطالبہ پیش کر دیا ۔ پریس کانفرنس کرتے ہوئے محمد امین انصاری نے زینب کے کئے وکالت کی خدمات پیش کرنے والے سپریم کورٹ کے وکیل آفتاب چیمہ کو زینب قتل کےس میںدس روپے فیس دیکر کیس لڑنے کے لئے اپنا وکیل مقرر کر لیا اور وزیر اعلی پنجاب میاں شہباز شریف کے آگے آٹھ مطالبات پیش کر دیئے نمبر 1۔زینب کے نام سے قصور میں کالج بنیا جائے۔نمبر2۔زینب قتل کیس میں پکڑے جانےوالےبے گناہ اور ناجائز افراد کو رہا کئے جائیں ۔نمبر3۔ناجائز او رجھوٹ درج مقدمات فوری طور پر خارج کئے جائیں ۔نمبر4۔ڈی پی او اور ڈی سی اور دیگر افسران کو عوام کے سامنے جواب دہ بنایا جائے اور اہل افسران کی قصور میں تعیناتی کی جائے ۔نمبر5۔قصور کو سیف سٹی بنانے کے لئے اس پر عمل درآمد کروایا جائے۔نمبر6۔جے آئی ٹی کی رپورٹ کو پبلک کےا جائے۔نمبر7۔ پنجاب بھر میں عوام اور اسکولوں کالجوں میں بچوں کی حفاظت کے لئے آگاہی مہم چلائی جائے اورنمبر8۔ پنجاب حکومت تما م متاثرین کو امدای رقم دے تاکہ انکا حساس محرومی ختم کیا جا سکے تاکہ آئےندہ ہنگامے نہ ہو اور قصور کو امن کا گہوارہ بنایا جاسکے ۔زینب کے والد سے چیئرمین پاکستان علماءکونسل مولانا زائد محمود قاسمی اور اسکی پندرہ رکنی ٹیم نے ملاقات کی اور زینب کے حوالے سے اظہار تعزیت کیا۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.