سری لنکن خواتین کےجسم کی ساخت کا مذاق اڑانے والے اشتہارپراحتجاج

کولمبو: سری لنکا کے دارالحکومت کولمبو میں واقع جم کے نئے اشتہار نے عوام کو اشتعال دلا دیا جس میں ایک خالی ڈرم کو عورت کے جسم سے تشبیہ دیتے ہوئے اشتہار میں لکھا ہے کہ عورت کی ایسی ساخت نہیں ہونی چاہیے۔ برطانوی ذرائع کے مطابق کولمبو کے اوسمو جم نے شہر کے مضافاتی علاقے میں بل بورڈ پر ایک اشتہار لگایا جس میں یہ پیغام درج تھا اور لگنے کے فوراً بعد ہی سوشل میڈیا پر اس حوالے سے بحث چھڑ گئی۔کئی لوگوں نے اس بل بورڈ کی تصویر سوشل میڈیا پر شائع کی اور اپنے غم و غصے کا اظہار کیا کہ اس اشتہار میں باڈی شیمنگ اور جنسی تعصب کا ہیغام دیا ہے۔ احتجاج کرنیوالوں نے ہیش ٹیگ بائیکاٹ اوسمو کا استعمال کیا جبکہ دوسروں نے فیس بک پر اوسمو جم کو مخاطب کر کے کہا کہ وہ اس اشتہار کو واپس لیں لیکن جم کی جانب سے کوئی جواب نہیں آیا اور اس اشتہار کی تصویر ان کے اپنے پیج پر لگی رہی۔اس اشتہار کے آنے کے بعد سے ماریسا نے چند اور خواتین کے ساتھ مل کر اس کے سد باب کیلئے کام کرنا شروع کر دیا۔  ان میں سے ایک خاتون نے اوسمو جم کے مارکیٹنگ مینیجر کو فون کر کے شکایت کی لیکن انھیں بتایا گیا کہ اشتہار میں استعمال ہونے والی تصویر کی کمپنی سے اجازت نہیں لی گئی تھی لیکن انھوں نے اشتہار کو واپس لینے کے بارے میں کوئی بات نہیں کی۔

چند اور لوگوں نے اس علاقے کے معاملات دیکھنے والے وزیر ہرشا ڈی سلوا سے رابطہ کیا اور انھیں اشتہار کے بارے میں بتایا۔ جواب میں ہرشا ڈی سلوا نے ٹویٹ کی جس میں انھوں نے کہا کہ میں نے کولمبو کے میونسپل کونسل کمشنر سے کہا ہے کہ اس غیر منظور شدہ اشتہار کو اتارا جائے اور کوٹے کے علاقے میں ایسے چیزوں کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔ادھر اوسمو جم نے اپنے پیغام میں کہا کہ انھوں نے اپنی اشتہاری مہم کو واپس لے لیا ہے اور ان کا مقصد قطعی طور پر خواتین کے جذبات کو ٹھیس پہنچانا نہیں تھا۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.