Daily Taqat

نوازشریف کیخلاف غداری کامقدمہ درج کرانےکی درخواستیں مسترد

لاہور:  لاہورہائیکورٹ نے نواز شریف کے خلاف غداری کا مقدمہ درج کروانے کی دائر درخواستیں ناقابل سماعت قرار دے کر مسترد کردیں۔سابق وزیراعظم نواز شریف کے ممبئی حملوں سے متعلق بیان کے خلاف پاکستان عوامی تحریک سمیت دیگر نے لاہور ہائیکورٹ میں غداری کا مقدمہ درج کرانے کے لیے درخواستیں دائر کی گئی تھیں،لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس شمس محمود مرزا نے درخواستوں پر فیصلہ سناتے ہوئے انہیں ناقابل سماعت قرار دے دیا۔عدالت نے درخواست گزاروں کو پہلے متعلقہ فورمز سے رجوع کرنے کی ہدایت کی۔پاکستان عوامی تحریک کے رہنما خرم نواز گنڈا پور کی جانب سے 14 مئی کو لاہور ہائیکورٹ میں دائر درخواست میں موقف اختیار کیا گیا تھا کہ نواز شریف کا ممبئی حملوں سے متعلق بیان ملک سے غداری کے مترادف ہے اس لیے ان کے خلاف غداری کا مقدمہ درج کرنے کا حکم دیا جائے۔سابق وزیراعظم کے خلاف اسلام آباد ہائیکورٹ میں بھی اندراج مقدمہ کی درخواست دائر کی گئی تھی جسے عدالت نے قابل سماعت قرار دے کر ڈی جی ایف آئی اے، چیئرمین پیمرا اور چیئرمین پی ٹی اے سے جواب طلب کر رکھا ہے۔واضح رہے کہ 12 مئی کو شائع ہونے والے ایک انٹرویو میں سابق وزیراعظم نواز شریف کا ممبئی حملوں سے متعلق کہنا تھا کہ عسکری تنظیمیں نان اسٹیٹ ایکٹرز ہیں اور ممبئی حملوں کے لیے پاکستان سے غیر ریاستی عناصر گئے، کیا یہ اجازت دینی چاہیے کہ نان اسٹیٹ ایکٹرز ممبئی جا کر 150 افراد کو ہلاک کردیں، بتایا جائے ہم ممبئی حملہ کیس کا ٹرائل مکمل کیوں نہیں کرسکے۔نواز شریف کے بیان پر بھارتی میڈیا نے اسے پاکستان کے خلاف استعمال کیا جب کہ ملکی سیاسی رہنماو¿ں کی جانب سے نواز شریف کے بیان کی شدید مذمت کی گئی۔سابق وزیراعظم کے متنازع بیان پر 14 مئی کو پاک فوج کی تجویز پر قومی سلامتی کا ہنگامی اجلاس ہوا جس کے بعد جاری ہونے والے اعلامیے میں قومی سلامتی کونسل نے نواز شریف کے بیان کو مکمل طور پر غلط اور گمراہ کن قرار دیتے ہوئے تمام الزامات کو متفقہ طور پر مسترد کیا۔14 مئی کو ہی نواز شریف نے احتساب عدالت میں پیشی کے موقع پر ممبئی حملوں سے متعلق دیا گیا بیان اپنے موبائل فون سے صحافیوں کو دوبارہ پڑھ کر سنایا اور کہا کہ چاہے جو کچھ بھی سہنا پڑے حق بات کروں گا اور میں نے جواب مانگا تھا میرے سوال کا جواب آنا چاہیے تھا۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »