Daily Taqat

امریکہ کو پاک چین دوستی اور خاص طور پر سی پیک کھٹکتا ہے ،مشاہد حسین سید

اسلام آباد:  خارجہ امور کمیٹی کے چیئرمین مشاہد حسین سید نے کہا ہے کہ پاکستان کیلئے اس بات کا ادراک ضروری ہے کہ امریکہ صرف پیغام لیکر آیا ہے یا پھر مزاکرات کی نیت سے پاکستان آیا ہے، امریکہ کے ساتھ برابری کی بنیاد پر اچھے تعلقات قائم کرسکتے ہیں، امریکہ کو پاک چین دوستی اور خاص طور پر سی پیک کھٹکتا ہے۔

مشاہد حسین سید نے کہا کہ امریکہ کی پوزیشن اس وقت خاصی کمزور ہے۔ انکی پالیسی میں لچک ہے چترل نکلسن نے افغان جنگ سے نکلنے کا اشارہ دیا ہے۔ افغانستان میں امریکی فوج کا مقصد جنگ لڑنا نہیں ہے بلکہ انٹیلی جنس ہے۔ افغان صوبوں میں امریکی اڈے پاکستان چین اور ایران پر نظر رکھنے کیلئے ہیں۔ ماضی کی غلطیوں سے ہمیں سیکھنا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ چین کو جنوبی ایشیاءمیں اپنا حریف سمجھتا ہے، امریکا کو پاک چین دوستی بالخصوص سی پیک منصوبہ کھٹکتا ہے، کابل میں امن کا راستہ براستہ اسلام آباد ہے اور اس کے علاوہ کوئی دوسرا راستہ نہیں ہے، ہماری سرزمین میں دہشتگری یا انتہاپسندی نہ ہو اس پر ہم ایک پیج پر ہیں، امریکا کے ساتھ برابری کی بنیاد پر اچھے تعلقات قائم کرسکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ امریکا کی افغانستان میں موجودگی رہے گی، امریکہ کو جب پاکستان کی ضرورت ہوتی ہے تو وہ تعلقات بڑھا لیتے ہیں اور جب کوئی اور مواقع انکو مل جاتے ہیں تب وہ پاکستان کی مخالفت پر اتر آتے ہیں، امریکا کا بنیادی دوست صرف بھارت ہے امریکہ کو افغانستان میں پائیدار امن قائم کرنے کیلئے پاکستان سے تعلقات بڑھانے کی ضرورت ہے اور اس کے علاوہ اس کے پاس کوئی اور راستہ نہیں ہے۔

 


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »