Daily Taqat

پاکستانی پولیس کو دنیا کی بہترین پولیس بنایا جائےگا , شہر یار آفریدی

اسلام آباد :   وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی نے کہا ہے کہ پاکستانی پولیس کو دنیا کی بہترین پولیس بنایا جائےگا، پولیس عوام کی عزت کرےگی تو اس کی عزت ہو گیعوام
کو عزت نہ دینے والوں کی دنیا میں کوئی عزت نہیں کرتا  پولیس کو بھی جدید ٹیکنالوجی سے استفادہ کرنے اور خود کو جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کرنے کی ضرورت ہے فوج  پولیس  قانون نافذ کرنے والے اداروں اور عوام نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں قیمتی جانوں کی قربانی دی ہےپاکستان کی خود مختاری اور سلامتی پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیاجاسکتا۔منگل کو یہاں نیشنل پولیس اکیڈمی میں 44ویں سپیشلائزڈ ٹریننگ پروگرام کے تحت 29 اے ایس پیز کی پاسنگ آﺅٹ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ قانون نافذ کرنے والے اداروں کاکردار معاشرے میں انتہائی اہمیت کا حامل ہو تا ہے۔ انہوںنے کہاکہ مجرم بہت ایڈوانس ہو چکے ہیں اور جرائم کے خاتمہ کے لئے جدید طریقے استعمال کررہے ہیں۔ پولیس کو بھی جدید ٹیکنالوجی سے استفادہ کرنے اور خود کو جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کرنے کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہاکہ 7 خاتون پولیس آفیسرز کی شمولیت بطور خاص مبارکباد کی مستحق ہے اور قوم کو اپنی ان بیٹیوںپر فخر ہے۔ انہوں نے کہاکہ پولیس سے عوام کی بڑی توقعات وابستہ ہیں۔ پاکستان کی پولیس، فوج اور قانون نافذ کرنے والے اداروں اور عوام نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں قیمتی جانوں کی قربانی دی ہے  ہم صرف پاکستان کی نہیں بلکہ پوری انسانیت کی جنگ لڑ رہے ہیں۔

پاکستان کی خود مختاری اور سلامتی پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیاجاسکتا۔ انہوں نے کہاکہ جرائم کے خلاف جدید طریقوںاور ذرائع کو بروئے کار لانے کی ضرورت ہے۔ پاکستانی قوم صلاحیتوں میں کسی سے کم نہیں اور وہ عالمی برادری میں مقابلہ کرنے کی بھرپور صلاحیت رکھتی ہے ۔ انہوں نے پولیس پر زور دیا کہ وہ شہریوںکو عزت دیں، اللہ تعالیٰ کے بعد عوام کے جان و مال اور عزت کے تحفظ کی ذمہ داری پولیس پر ہے۔ تھانوں میں عوام کے ساتھ بہتر سلوک کیاجائے اور انہیں عزت دی جائے۔ اگر پولیس عوام کوعزت نہیں دے گی تو ریاست اور پولیس کی اپنی عزت بھی نہیں ہو گی۔ انہوں نے کہاکہ بزرگوں، بچوں اور ماﺅں بہنوں کو تھانوں میں رسوا کیاجائے گا اور ان کی تذلیل کی جائے گی تو ایسے میں اللہ کی رحمت کی امید نہیں رکھنی چاہیے ۔ جو قومیں اپنے شہریوں اور عوام کو عزت نہیں دیتی ان کی دنیا میں کوئی عزت نہیں ہوتی۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے خیبر پختونخوا میں پولیس کے نظام میں بہترین اصلاحات کیں جنہیں عالمی سطح پر سراہا گیا۔

ایسی اصلاحات کی مثال نہیں ملتی، پولیس کو سیاسی سے مداخلت سے پاک کردیا۔ انہوں نے پولیس کے پاس آﺅٹ ہونے والے افسروں پر زور دیا کہ وہ عوام کو تحفظ کااحساس دلائیں۔ پولیس کاعوام سے براہ راست رابطہ ہوتاہے اگر پولیس عوام کوعزت دےگی تو عوام پولیس کو عزت دے گی۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان کی پولیس کو جدید تقاضوںسے ہم آہنگ کرنا نئے پاکستان کے وژن کاحصہ ہے۔

ہمیں اپنی پولیس کو نہ صرف خطے بلکہ دنیاکی بہترین پولیس بناناہے۔ انہوں نے پاس آﺅٹ ہونے والے آفیسرز کو مبارک باد دی اور توقع کااظہار کیا کہ ان کی شمولیت سے پولیس کو مثالی اور جدید بنانے میںمدد ملے گی۔ قبل ازیں انہوں نے پاسنگ آﺅٹ پریڈ کامعائنہ کیا اور نمایاں کارکردگی کامظاہرہ کرنے والے آفیسرز میں شیلڈز تقسیم کیں۔ کمانڈنٹ نیشنل پولیس اکیڈمی نے بھی وزیر داخلہ کو شیلڈ پیش کی۔ کمانڈنٹ نیشنل پولیس اکیڈمی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پولیس نے ریاست کی رٹ قائم کرنے اور عوام کے جان و مال اور عزت و آبرو کے تحفظ کے لئے جرا¿ت مندانہ کردار ادا کیا۔ نیشنل پولیس اکیڈمی کے 13 گریجویٹس نے شہادت کارتبہ حاصل کیا۔ انہوں نے اکیڈمی کے لئے مزید اراضی فراہم کرنے کی درخواست بھی کی۔ تقریب میں پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار آل راﺅنڈ بیسٹ قرار دی جانے والی اے ایس پی فریال فرید کو اعزازی شمشیر سے نوازا گیا۔

اس کے علاوہ ڈاکٹر انعم فریال، علی رضا، فریال فرید، عثمان میر اور صدام حسین نے بالترتیب اکیڈمک، ٹریننگ، ڈسپلن، فائرنگ اور پریڈ میں بیسٹ آفیسر کا اعزاز حاصل کیا۔قبل ازیں وزیر مملکت برائے داخلہ شہریارآفریدی نیشنل پولیس اکیڈمی میں اے ایس پیز کی پاسنگ آﺅٹ تقریب میں شرکت کے لئے قطر سے واپسی کے بعد ایئرپورٹ سے براہ راست اکیڈمی پہنچے۔ تقریب کے بعد وہ شرکاءمیں گھل مل گئے اور ان سے مختلف موضوعات پر تبادلہ خیال کیا۔ انہوں نے تقریب میں شریک ریٹائرڈ سینئر پولیس افسران سے بھی بات چیت اور مشاورت کی۔

 


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »