Daily Taqat

ایم کیو ایم میں تنظیمی بحران، میئرکراچی اور چیئرمینز معاملات میں الجھ گئے

کراچی : ایم کیو ایم پاکستان میں تنظیمی بحران کے سبب شہر کے بلدیاتی اداروں کا نظام مفلوج ہوکر رہ گیا میئر کراچی وسیم اختر اور تینوں ڈسٹرکٹ چیئرمین پارٹی معاملات میں الجھ کر رہ گئے کے ایم سی اور ڈی ایم سیز میںروز مرہ کاموں کے لیے آنے والی شہری پریشانی کے عالم میں واپس جاتے  رہے تفصیلات کے مطابق کراچی کی اکثریت بلدیاتی اداروں میں کنٹرول کرنے والی جماعت ایم کیو ایم پاکستان میں قیادت اور تنظیمی بحران کے سبب میئر کراچی وسیم اختر ، کورنگی ، شرقی اور وسطی کے چیئرمین نیئر رضا، معید انور اور ریحان ہاشمی سب کے سب عوامی عہدے کے بجائے تنظیمی سرگرمیوں اور درپیش پارٹی مسائل کے حوالے سے الجھے رہے ایم کیو ایم پاکستان میں تنظیمی بحران نے بلدیاتی قیادت کو بھی پریشان کرکے رکھ دیا ہے پارٹی معاملات کی خرابی سامنے آنے کے بعد میئر کراچی وسیم اختر اور اضلاع کے چیئرمینز بھی الگ الگ کھڑے دکھائی دیئے ہیں وسیم اختر، معید انور اور نیئر رضا نے بہادر آباد کیمپ جوائن کررکھا تھا جبکہ ریحان ہاشمی نے ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ فاروق ستار کے گھر پر موجودگی برقرار رکھی ہوئی تھی ایم کیو ایم پاکستان میں موجود بحران کے سبب جہاں دن بھر بلدیاتی قیادت دفتروں سے غائب رہی ادھر نہ صرف بلدیاتی عملہ جلد گھر چلا گیا بلکہ اپنے مسائل کے حل کے لیے آنے والے عوام بلدیاتی اداروں میں اپنے کام و مسائل حل کروائے بغیر واپسی جانے پر مجبور رہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ میئر کراچی وسیم اختر، بلدیہ شرقی کے چیئرمین معید انور، بلدیہ کورنگی کے چیئرمین نیئر رضا کے پارٹی میں سربراہ سے زیادہ رہنما عامر خان سے قربت قائم ہے جبکہ ایم کیو ایم پاکستان میں بلدیاتی سیٹ اپ کے ان تینوں ارکان کو عامر خان گروپ کا کہہ کر پکارا جاتا ہے تاہم اس کے برعکس بلدیہ وسطی کے چیئرمین کی واضح پالیسی سامنے آئی ہے ان کی جانب سے رابطہ کمیٹی کے کچھ ارکان سے بلا جواز مداخلت کی بنا پر اختلافات ہیں جبکہ متحدہ پاکستان کی موجودہ صورتحال میں ریحان ہاشمی نے پارٹی سربراہ فاروق ستار کا کھل کر ساتھ دیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کے ایم سی ، کورنگی اور شرقی کے ملازمین جو ایم کیو ایم پاکستان کے ورکر ہیں انہیں مختلف طریقوں سے فاروق ستار کے اجلاس میں شرکت سے روکا گیا ایم کیو ایم رہنما جو کے ایم سی اور ڈی ایم سیز میں مختلف عہدوں پر فائز ہیں دوہ پارٹی بننے کے بجائے خاموشی سے گھر بیٹھ گئے ہیں یونین کمیٹی کی سطح پر بھی بلدیاتی چیئرمین دفتروں سے غائب رہے۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »