Daily Taqat

سپریم کورٹ کا وزیر اعظم سمیت 65 افراد کا گھر ریگولرائز کرنے کا حکم

اسلام آباد : سپریم کورٹ نے بنی گالہ میں عمارتوں کی ریگولرائزیشن کیس میں عمران خان سمیت65لوگوں کی تعمیرات ریگولرائز کرنے کا حکم دیتے ہوئے کیس کی سماعت دس روز کیلئے ملتوی کردی،چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ عمران خانکے وکیل بابر اعوان کہاں ہیں ان کو آنا چاہئے تھا پتہ کریں بابر اعوان کہاں ہیں؟ یہ اتنا آسان کام نہیں جتنا نظر آتا ہے،حیران ہوں سی ڈی اے میں کیا ہورہا ہے،سی ڈی اے والے اب ہی کچھ کرلیں انصاف کرنا صرف عدالت ہی کا کام نہیں، خدانخواستہ زلزلہ آتا ہے تو بہت بڑی عمارت تباہ ہوسکتی ہے،جب یہ عمارتیں بن رہی تھیں سی ڈی اے کہاں تھا، عمران خان نے زون تھری کے بارے میں درخواست دائر کی تھی، زون تھری کی حالت زون فور سے بھی بری ہے،تمام متعلقہ حکام پر مشتمل کمیٹی قائم کی اس کی رپورٹ ا بھی نہیں آئی۔ جمعرات کو سپریم کورٹ میں بنی گالہ میں عمارتوں کی ریگولرائزیشن سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔ ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے بتایا کہ زون 4 میں 72ہزار ایکڑ سے زیادہ رقبہ ہے زون فور میں 65 ہزار گھر تعمیر ہوچکے ہیں زون فور میں 65 ہزار گھروں کی تعمیر پر چیف جسٹس نے اظہار تعجب کیا ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے بتایا کہ عمران خان کا گھر زون تھری اور فور میں آتا ہے۔ عمران خان نے گھر کی ریگولرائزیشن کے لئے درخواست دے رکھی ہے۔ رہائشی علاقوں کے لئے چھ روپے فی مربع فٹ فیس مقرر کی ہے عمارت کے استعمال میں تبدیلی کی فیس الگ ہوگی۔ جسٹس اعجاز الاحسن نے سوال کیا کہ 2005 سے اب تک ریگولرائزیشن کیوں نہیں ہوتی؟ چیف جسٹس نے کہا عمران خان کے وکیل بابر اعوان کہاں ہیں ان کو آج آنا چاہئے تھا پتہ کریں بابر اعوان کہاں ہیں؟ یہ اتنا آسان کام نہیں جتنا نظر آتا ہے۔

ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے بتایا کہ بنی گالہ میں زلزلے سے بچاﺅ کی تدابیر کے بغیر عمارتیں تعمیر کی گئیں۔ چیف جسٹس نے کہا حیران ہوں سی ڈی اے میں کیا ہورہا ہے۔ سی ڈی اے والے اب ہی کچھ کرلیں انصاف کرنا صرف عدالت ہی کا کام نہیں۔ خدانخواستہ زلزلہ آتا ہے تو بہت بڑی عمارت تباہ ہوسکتی ہے۔ جب یہ عمارتیں بن رہی تھیں سی ڈی اے کہاں تھا۔ عمران خان نے ا ےن زون تھری کے بارے میں درخواست دائر کی تھی۔ زون تھری کی حالت زون فور سے بھی بری ہے۔ تمام متعلقہ حکام پر مشتمل کمیٹی قائم کی اس کی رپورٹ ا بھی نہیں آئی۔ ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے بتایا کہ کمیٹی نے تعمیرات کو ریگولرائز کرنے کیس سفارش کی ہے جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ 65 ہزار ریگولرائزیشن کریں گے ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے بتایا کہ ماسٹر پلان موجود ہے عدالت نے عمران خان سمیت 65 لوگوں کی تعمیرات ریگولرائز کرنے کا حکم دے دیا ریگولرائزیشن کمیٹی نے مزید تفصیلات دینے کے لئے دس روز مہلت کی استدعا کردی عدالت نے کیس کی سماعت دس روز کے لئے ملتوی کردی۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »