نوازشریف اوروزیراعظم کی زیرقیادت (ن) لیگ کی3گھنٹے زائدتک طویل بےٹھک

لاہور:  مسلم لیگ(ن) کے مر کزی صدر نواز شریف اور وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کی زیر قیادت (ن) لیگ کی3گھنٹے زائدتک طویل بیٹھک ‘مارچ میں سینٹ انتخابات کو ہر صورت یقینی بنانے کا فیصلہ ‘حکومت کے خلاف ہونےوالی سازشیں ناکام بنانے کےلئے اتحادیوں سے بھی بات چیت کی جائےگی ‘بلوچستان میں حکومت کی تبدیلی کے معاملے (ن) لیگ)
قائدین نے اظہار تشویش کا اظہار کر دیا ‘حکومت کی آئینی مدت سے پہلے بجلی سمیت دیگر شعبوں میں حکومتی محکموں کو پر اجیکٹ مکمل کر نے کی ہدایت کردی گئی ‘سابق مشیر خزانہ شوکت ترین کی بھی (ن) لیگ کے صدر میاں نوازشر یف سے ملاقات ‘شوکت ترین کو حکومت میں اہم ذمہ داری ملنے کا امکان  رپورٹس کے مطابق سوموار کے روز وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی اسلام آباد سے لاہور پہنچے تو وزیراعلی پنجاب شہباز شریف نے ان کا استقبال کیا جس کے بعد دونوں سیاسی رہنما بذریعہ ہیلی کاپٹر جاتی امرا پہنچے جبکہ (ن) لیگ کی تین گھنٹے سے زائد تک ہونےوالی اس بیٹھک میں وفاقی وزیرریلوے خواجہ سعد رفیق بھی شر یک ہوئے جبکہ کچھ دیر کےلئے چیف سیکرٹری پنجاب بھی اجلاس میں شر یک ہوئے اور پنجاب میں صوبائی اور وفاقی حکومت کے منصوبوں کے حوالے سے زیر بحث آنےوالے پر اجیکٹ کے حوالے سے بر یفنگ دیں (ن) لیگ کی ہونےوالی اس طویل بےٹھک میں سینیٹ کے آئندہ انتخابات، جاری ترقیاتی منصوبوں، امن و امان کی صورت حال اور سیاسی حالات‘ آئندہ انتخابات کی حکمت عملی‘(ن) لیگ کے جلسوں اور بلوچستان میں سیاسی و انتظامی تبدیلیوں کے حوالے سے بات چیت کی گئی سابق وزیر خزانہ شوکت ترین نے مسلم لیگ ن کی قیادت سے ملاقات کی اور انہوں نے ملکی کرنٹ اکانٹ خسارے کے حوالے سے اہم تجاویز دیں اجلاس میں شوکت ترین کو مشیر خزانہ بنانے کے حوالے سے بھی بات چیت کی گئی۔ذرائع کے مطابق (ن) لیگ کے قائدین نے فیصلہ کیا ہے کہ ملک میں سینٹ انتخابات کو روکنے اور حکومت کے خلاف ہونےوالی تمام سازشیں آئینی اور جمہوری طر یقے سے اتحادیوں کےساتھ ملکر ناکام بنائی جائیں گی اور موجودہ سےاسی صورتحال پر (ن) لیگ کی قیادت اوروزیر اعظم بھی اپنے اتحادیوں کے ساتھ رابطے اور ملاقاتیں کر یں اور ملکر آئندہ کے حوالے سے معاملات کو آگے بڑ ھایا جائےگا اور پنجاب سمیت ملک بھر میں وفاقی اور پنجاب حکومت کے منصوبوں کو جلد ازجلد مکمل کر نے کےلئے بھی تمام وسائل بیروکار لائے جائیں گے۔ذرائع کے مطابق اس ملاقات میں بلو چستان میں (ن) لیگ کی حکومت کے خلاف کئے جانےوالے اقدامات کو وزیر اعلی کے انتخابات کے معاملے پر بھی (ن) لیگی قیادت نے اظہار تشویش کیا ہے اور فیصلہ کیا ہے کہ جمہوریت کا ہر صورت بھر پور تحفظ کیا جائےگا میڈیا رپورٹس کے مطابق اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے میاں نوازشر یف نے کہا کہ بلو چستان میں جو کچھ ہوا وہ سب کے سامنے ہے ہم آئینی اور جمہوری انداز میں اپنی جد وجہد کر رہے ہیں اور اس ملک میں آئے دن وقانون کی حکمرانی اور پار لیمنٹ کی بالادستی کو یعقینی بنانے کےلئے ہر ممکن اقدام کر یں گے۔ انہوں نے کہا کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ جمہوریت کی مضبوط اور غیرجمہوری قوتوں کو ناکام بنانے کےلئے ضروری ہے کہ ملک میں ووٹ کے تقدس کو یعقینی بنایا جائے اسی لئے ہم ووٹ کے تقدس اور تحر یک عدل کی بات کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ دھر نے والوں نے پہلے بھی ملکی ترقی کی راہ میں رکاوٹیں ڈالیں مگر ہم نے انکو کامیاب نہیں ہونے دیا اور اب بھی احتجاج اور دھر نوں کی سیاست کر نےوالے اپنے عزائم میں ناکام ہوں گے اورہم ملک وقوم کی خدمت کا مشن جاری رکھےں گے۔

 


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.