وزارت مذہبی امورنے سندھ ہائیکورٹ کے حکم پرحج قرعہ اندازی موخرکردی

اسلام آباد: وزارت مذہبی امورنے شیڈول کے مطابق آج ہونےوالی حج قرعہ اندازی موخر کر دی۔تفصیلات کے مطابق جمعہ کو وفاقی وزیر مذہبی امور سردار یوسف کی زیر صدارت
وزارت مذہبی امور میں اہم اجلاس ہوا، اجلاس میں حج سے متعلق امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ اجلاس میں آج ہونے والی حج قرعہ اندازی موخر کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ سندھ ہائیکورٹ کے حکم امتناع کے بعد حج قرعہ اندازی منسوخ کی گئی ہے۔ ترجمان وزارت مذہبی امور کے مطابق قرعہ اندازی کی نئی تاریخ کا اعلان بعد میں کیا جائے گا۔ اس حوالے سے وزیرمذہبی امورسرداریوسف کا کہنا ہے کہ حج 2018 معاہدے پردستخط کے لئے سعودی عرب جاو¿ں گا، سعودی عرب کے ساتھ حج معاہدہ جلد طے پا جائے گا، حج کے تمام معاملات بر وقت مکمل کرنا چاہتے ہیں اور حج آپریشن میں تاخیر ہوئی تو ذمہ داری ان پر ہوگی جو اس کا باعث ہوں گے۔اس سے قبل لاہور ہائی کورٹ نے سرکاری اور پرائیوٹ حج کوٹہ 50، 50 فیصد، سندھ ہائی کورٹ نے سرکاری کوٹہ 60 اورپرائیویٹ 40 فیصد کرنے کا حکم دیا جب کہ کابینہ نے سرکاری حج کوٹہ 67 فیصد اور پرائیویٹ 33 فیصد منظورکیا تھا۔واضح رہے کہ وزارت مذہبی امور کی جانب سے حج 2018 کیلیے جانے والے خوش نصیبوں کے ناموں کی قرعہ اندازی آج کی جانی تھی اور درخواست گزاروں کو کامیابی اور ناکامی کی اطلاع بذریعہ ایس ایم ایس دی جاتی۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.