Latest news

چونیاں، 3معصوم بچوں بے دردی سے قتل ،شہریوں کا بھرپور احتجاج

چونیاں :  چونیاں 3معصوم بچوں کا اغوا کے بعد بے دردی سے قتل شہریوں کا بھرپور احتجاج سٹی تھانہ پر پتھراﺅ ،آئی جی پنجاب کا نوٹس ،ڈی پی او، ڈی ایس پی ،اور ایس ایچ او معطل ،شہر کی فضاءپانچویں روز بھی سوگوار تمام سرکاری اور پرائیویٹ سکول بند شہری خوف میں مبتلا پولیس ابھی تک درندہ صفت قاتل کو ٹریس کرنے میں ناکام تفصیلات کے مطابق چونیاں سے اغواءہونے والے بچوں کی تعداد پانچ ہو گئی 17سالہ امیرحمزہ دو ماہ سے لاپتہ ہے اور اسکے اغوا کا مقدمہ تھانہ سٹی چونیاں میں بچے کے والد کے بیان پر درج کیا گیا ،جبکہ آٹھ سالہ محمد فیضان ،نو سالہ سلمان اور تقریبا آٹھ سالہ علی حسنین کو بد فعلی کے بعد بے دردی سے قتل کر دیا گیا فیضان کی نعش برہنہ حالت میں چونیاں انڈ سٹریل زون کے کھنڈرات سے برآمد ہوئی جبکہ علی حسنین اور سلمان کے کھوپڑیا ں اور دیگر جسم کے اعضا ءموصول ہوئے جبکہ 9سالہ عمران ابھی تک لا پتہ ہے فیضان کی میڈیکل رپورٹ نے واضع کیا کہ اسے زیادتی کے بعد گلا دبا کر قتل کیا گیا ہے ۔شہریوں کا کہنا ہے کہ آج سے دو ماہ قبل مقامی صحافی ملک محمد احمد غازی ، رانا الیا س خا ں ، رانا رسلان محمود خاں اور انکی پوری ٹیم نے بچوں کے اغوا کے معاملے کو پرنٹ میڈیا کے ذریعے اعلیٰ سطح پر اٹھایا تھا اگر مقامی پولیس اسی وقت ایکشن لے لیتی اور موثر حکمت عملی اپنا کر اغواءکاروں کو ٹریس کر تی تو آج ہمارے تین معصوم بچے بد فعلی کے بعد قتل نہ ہوتے مقامی پولیس کی بے حسی نے ہم سے ہمارے لخت جگرچھین لئے ہیں میڈیا پر خبریں نشر ہونے کے بعد وزیر اعلیٰ پنجاب کے حکم پر آئی جی پنجاب نے ڈی پی او قصور ، ڈی ایس پی چونیاں اور ایس ایچ او تھانہ سٹی چونیاں کو معطل تو کر دیا ہے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.