Daily Taqat

خیبر ایجنسی کےسرکاری اسکولوں میں غیرحاضراساتذہ کو معطل کیا جائے، عامرآفریدی

خببر ایجنسی: خیبر یوتھ فورم کے صدر عامر آفریدی نے مطالبہ کیا ہے کہ خیبر ایجنسی کے سرکاری اسکولوں میں پچھلے کئی سالوں سے غیر حاضر اساتذہ کو فی الفور معطل کیا جائے۔ خیبر ایجنسی میں تقریبا 2002 سے لیکر اب تک بہت سے اساتذہ بااثر افراد کی سپرستی کی وجہ سے گھر بیٹھے سرکار سے تنخواہ وصول کر رہے ہیںایک طرف خیبر ایجنسی میں پہلے ہی سے سرکاری اسکولوں میں اساتذہ کی فقدان ہے جبکہ دوسرے طرف ڈیوٹیوں پر مامور اساتذہ اپنی ڈیوٹیوں سے بالکل بے خبر ہیں محکمہ تعلیم کے اعلی افسران انکے سامنے بےبس ہےں حالانکہ انھیں خوب علم ہے کہ کون کون سے اساتذہ کتنے کتنے عرصے سے اپنی ڈیوٹیاں سرانجام نہیں دیتے محکمہ تعلیم کے اعلی افسران انکے خلاف اپنے کرسی بچانے کی خاطر کاروائی نہیں کرسکتے دوسری طرف بہت سے اساتذہ مہینے میں صرف 15 یا اس سے بھی کم دن آپنی ڈیوٹیاں سرانجام دیتی ہے۔عامر آفریدی نے مزید کہا کہ بہت ہی افسوس کی بات ہے کہ محکمہ تعلیم کے اعلی افسران کے لئے این جی اوز کے زیر اہتمام تعلیمی تقریبات کیلئے ہفتے میں دو ،دو اور تین، تین دن کا وقت ہوتا ہے لیکن سرکاری اسکولوں میں اساتذہ کی غیر حاضری،اسکولوں میں موجود دوسرے مسائل کیلئے مہینے میں ایک دن کا وقت ہوتا ہے اور اگر وزٹ بھی کرتے ہیں تو صرف روڈ سائڈ پر موجودہ اسکولوں میں صرف پرنسپل اور اساتذہ کو سلام دعا کے بعد واپس چلا جاتا ہے، ایک طرف محکمہ تعلیم اور حکومت یہ دعوی کرتی ہے اور مختلف میں فخریہ انداز میں کہتے ہیں کہ ہم نے خیبر ایجنسی کے سرکاری اسکولوں کی آبادکاری کی ہے اور جتنے بھی ضروریات ہیں انکو پورا کیا ہے جو کہ سراسر جھوٹ اور حقائق پر مبنی نہیں، باڑہ میں اب بھی بہت سے ایسے اسکول ہیں جنہیں بلڈنگ تو دور کی بات ہے ٹینٹ بھی میسر نہیں ہے اسی طرح جمرود اور لنڈی کوتل تحصیل میں اب ایسے اسکول ہے جوچار دیواری اور واش روم اور دوسری سہولیات سے محروم ہیں خیبر ایجنسی میں 70 فیصد سے زائد اسکولوں میں فرنیچر نہیں، ہم آرمی چیف قمر جاوید باجوہ ،گورنر خیبر پختونخوا اقبال ظفر جھگڑا، ایڈیشنل چیف سیکرٹری اور پی اے خیبر اسلام زیب سے درخواست کرتے ہیں کہ ہمارے بچوں کے مستقبل کو روشن بنائیں اور ساتھ ہی یہ مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ پچھلے کئے سالوں سے خیبرایجنسی کے سرکاری اسکولوں میں این جی اوز کی طرف سے مختلف پروجیکٹ میں لگائے گئے اربوں روپے کی تحقیقات کریںاور سرکاری اسکولوں کی ہر طرح مانیٹرنگ کے کیلئے ایک مضبوط،صاف شفاف کمیٹی بنائے جو اسکولوں کی باقاعدگی سے معائنہ کرے ۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »