گجرات اوردہلی میں دھماکوں میں ملوث بھارتی اسامہ بن لادن گرفتار

نئی دہلی: بھارت کے دارالحکومت نئی دہلی میں پولیس نے 2088 ءمیں پے درپے بم دھماکوں میں ملوّث ایک مشتبہ اور مطلوب شخص عبدالسبحان قریشی کو ایک چھاپا مار کارروائی کے بعد گرفتار کر لیا ۔قریشی کو بھارت کا اسامہ بن لادن قرار دیا جاتا رہا ہے اور وہ بھارتی مجاہدین نامی جنگجو تنظیم کا مرکزی بم ساز تھا۔رپورٹ کے مطابق قریشی اسکول کے زمانے میں ایک خاموش طبع اور ذہین طالب علم تھا۔اس کے انتہا پسند بننے کا سفر2001ءمیں شروع ہوا تھا ۔اس نے تب اچھی شہرت کی حامل ایک کمپیوٹر فرم میں ملازمت کے لیے تعلیم کو خیرباد کہہ دیا تھا۔یہ فر م تقریریں ریکارڈ اور ایڈٹ کیا کرتی تھی ۔اس کو بھارت میں اسلامی طلبہ تحریک کا ترجمان کا قرار دیا جاتا تھا۔ بعد میں ملک میں اس تحریک پر پابندی عاید کردی گئی تھی۔دہلی کے ایک پولیس افسر نے بتایا کہ2008ءمیں مجاہدین گروپ کے جنرل سیکریٹری کی گرفتاری کے بعد عبدالسبحان قریشی اس کا کرتا دھرتا بن گیا تھا۔اس مجاہدین گروپ نے2007ءاور 2008ءمیں جے پور ، احمد آباد ، دہلی اور شمالی ریاست اتر پردیش میں برقی میلوں کے ذریعے بم دھماکوں کی ذمے داری قبول کی تھی اور بھارتی حکومت نے قریشی کا نام مطلوب دہشت گردوں کی فہرست میں شامل کر لیا تھا۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.