Daily Taqat

ٹارگٹ کلنگ میں شہید 52وکلا کے لواحقین کو معاوضہ دینے کا معاملہ

کراچی: سپریم کورٹ نے ٹارگٹ کلنگ کے میں شہید ہونے والے 8 وکلا کے لواحقین کو 15 روز میں معاوضہ ادا کرنے کا حکم دے دیا ہے۔ہفتہ کو
سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں ٹارگٹ کلنگ میں شہید 52 وکلا کے لواحقین کو معاوضہ دینے سے متعلق سماعت ہوئی۔دوران سماعت ایڈووکیٹ جنرل سندھ ضمیرگھمرونے کہا کہ 44 شہید وکلا کے اہلخانہ کو فی کس 5 لاکھ روپے معاوضے کی ادائیگی کی جاچکی ہے۔ 8 شہید وکلا کے ورثا سے رابطہ اور تصدیق نہیں ہورہی۔ اگر کراچی بار چاہے تو 8 وکلا کے لواحقین کا معاوضہ بار کے سپرد کیا جاسکتا ہے۔ صدر کراچی بار حیدر امام رضوی نے کہا کہ حکومت سندھ نے شہدا کے اہل خانہ کو پلاٹ دینے کا بھی وعدہ کیاتھا۔ جسٹس مقبول باقر نے ریماکس دیئے مجھ پر حملہ ہوا پولیس اہلکار شہید وزخمی ہوئے لیکن نہ معاوضہ ملا نہ پلاٹ دیا گیا۔ جسٹس مقبول باقر نے ایڈووکیٹ جنرل سندھ سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا شہدا کے لواحقین کی داد رسی کیلئے حکومت سندھ کچھ کرے اور نیکی کمائے۔ حیدر امام رضوی نے کہا کہ کراچی بار ماہانہ بارہ ہزارروپے شہید وکلا کی بیواﺅں کو دے رہی ہے۔ سپریم کورٹ نے ایڈووکیٹ جنرل سندھ بار کے عہدیداروں کی ساتھ بیٹھ کر معاملہ حل کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے حکومت کو مزید 8 شہید وکلا کے اہل خانہ کو 15 روز میں معاوضہ ادا کرنے کا حکم دے دیا۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »