Daily Taqat

گورنر سندھ محمد زبیر سے سی پی این ای کے نو منتخب عہدیداروں کی ملاقات

کراچی :  گورنر سندھ محمد زبیر نے گورنر ہاو¿س میں کونسل آف پاکستان نیوزپیپر ایڈیٹرز (سی پی این ای) کے نو منتخب صدر عارف نظامی سمیت عہدیداروں اور اسٹیڈنگ کمیٹی کے اراکین کے اعزاز میں عصرانہ دیا۔ اس موقع پر امن و امان، سیاسی صورتحال، عام انتخابات، معاشی سرگرمیوں میں اضافہ سے عام آدمی پر اس کے اثرات، جمہوریت کے تسلسل میں صحافت کے کردار اور اہمیت کے  حامل دیگر امور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔ گورنر سندھ نے نو منتخب عہدیداروں کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ منتخب عہدیدار اپنی صلاحیت سے ادارہ کو مزید فعال بالخصوص صحافت کو درپیش مسائل کے حل اور مشکلات کے خاتمہ میں اہم کردار ادا کریں گے۔ نو منتخب عہدیدار وسیع تجربہ، قومی جذبہ اور بھرپور صلاحیتوں کے مالک ہیں جن کا انتخاب صحافتی پیشہ کے لئے اہم ثابت ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ صحافت ریاست کا ستون اور جمہوری اداروں، سماجی شعبہ جات اور عوامی فلاح و بہبود کے ضمن میں شروع ہونے والے منصوبوں میں شفافیت یقینی بنانے کے لئے بھرپور خدمات انجام دے رہا ہے۔ صحافت نے جمہوریت کے قیام، تسلسل اور استحکام میں بے پپناہ قربانیاں دیں جو کہ قابل ستائش ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہماری تاریخ کے اہم ترین انتخابات ہونے والے ہیں جس میں شفافیت کے عمل کو ہر صورت یقینی بنانے کے لئے متعلقہ اداروں، اسٹیک ہولڈرز اور عوام کو اہم کردار ادا کرنا ہے۔ اس ضمن میں صحافت کے کردار کو فراموش نہیں کیا جا سکتا ہے۔ افواہوں اور بے یقینی کے ماحول میں سرمایہ کاری پر انتہائی برے اثرات مرتب ہوتے ہیں جس سے قومی معیشت پر بھی گہرے منفی اثرات پڑتے ہیں جو کہ مستحکم معیشت، قومی اتحاد اور پر امن فضا کے لئے انتہائی نقصان دہ ثابت ہوتے ہیں۔ عوام کو درست حقائق سے آگاہ کرنا صحافت کی اولین ذمہ داری ہے۔ اصل حقائق سے آگاہی سے ہی افواہوں اور بے یقینی کی صورتحال کو ختم کیا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ 2013ءمیں عوام نے تین صوبوں میں مختلف سیاسی جماعتوں کو حکومت کا موقع فراہم کیا، صوبوں کی کارکردگی کی بنیاد پر ہی عوام 2018ءمیں اپنے نمائندوں کا انتخاب کریں گے۔ یہ ایک اچھا اور ملک کے لئے بہتر موقع ہے کہ جب کارکردگی کی بنیاد پر عوام اپنے نمائندے منتخب کریں گے، مثبت مسابقتی ماحول پیدا ہونے سے ہی ملک و قوم کی ترقی و خوشحالی یقینی ہے۔ ملاقات میں نو منتخب صدر عارف نظامی، سیکریٹری جنرل ڈاکٹر جبار خٹک، سینئر نائب صدر امتنان شاہد، نائب صدور ایاز خان، اکرام سہگل، رحمت علی رازی، طاہر فاروق، عارف صدیق بلوچ، جوائنٹ سیکریٹری عامر محمود، فنانس سیکریٹری حامد حسین عابدی، اطلاعات سیکریٹری عدنان ملک،سابق صدر ضیا شاہد، سابق سیکریٹری جنرل اعجازالحق، اسٹینڈنگ کمیٹی کے دیگر اراکین کاظم خان، غلام نبی چانڈیو، انور ساجدی، عبدالخالق علی، مقصود یوسفی، مظفر اعجاز، احمد اقبال بلوچ، شمس الضحیٰ، نشید راعی، خلیل الرحمن، شکیل احمد ترابی، میاں فضل الٰہی، اکمل چوہان، علی احمد ڈھلون، وقاص طارق فاروق، زبیر محمود خالد، سعید خاور، محمد طاہر، تنویر شوکت، عبدالرحمن منگریو، بشیر احمد میمن، یحییٰ خان سدوزئی، سردار نعیم، معظم فخر، ذوالفقار احمد راحت، احمد شفیق، شیر محمد کھاوڑ، سہیل دانش، فقیر منٹھار منگریو، ممتاز احمد صادق، محمود عالم خالد، منزہ سہام اورزاہدہ عباسی شامل تھے۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »