حکومت پنجاب نے زمینداروں کی سہولت کےلئے ضلعی سطحوں پر تجزیہ گاہیں قائم کی ہیں،محکمہ زراعت

لاہور(سٹی رپورٹر) کاشتکار تجزیہ اراضی سے زمین کی ساخت، کلر اور تھور قابل حصول نائٹروجن، پوٹاش، زنک، بوران اور نامیاتی مادے کی مقدار، زمین کا تعامل (pH) اور جپسم کے بارے میں معلومات حاصل کر سکتے ہیں اور ان تجزیاتی نتائج کی روشنی میں زمین کی زرخیزی بحال رکھنے، کلراٹھی زمینوں کی اصلاح اور مختلف فصلوں کی زیادہ پیداوار کےلئے کھادوں کی سفارشات مرتب کر سکتے ہیں ۔ ترجمان کے مطابق کاشتکار کسی بھی فصل سے فی ایکڑ بہتر پیداوار حاصل کرنے کےلئے فصل کاشت کرنے سے پہلے کھیتوں کی مٹی کا کیمیائی تجزیہ ضرور کروائیں۔ اس سلسلہ میں حکومت پنجاب نے زمینداروں کی سہولت کےلئے ضلعی سطحوں پر تجزیہ گاہیں قائم کی ہیں جس کا انتظام محکمہ نظامت زرخیزی زمین کے ذمہ ہے۔ یہ لیبارٹریاں یا تجزیہ گاہیں مکمل طور پر کیمیائی تجزیہ اراضی کےلئے مخصوص ہیں۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.