این ٹی ایس) ٹیسٹ میرٹ پردیا گیا تھا،پیپرمنسوخ کرناغیرقانونی ہے درخواست گزار کا موقف،سندھ ہائی کورٹ)

کراچی:  آج سندھ ہائیکورٹ میں (این ٹی ایس )سے متعلق درخواستوں پر فیصلہ سنایا گیا۔ جس میں وزیراعلیٰ سندھ کے نوٹیفکیشن کو کالعدم قرار دے دیا گیا،تفصیلات کے مطابق سندھ ہائیکورٹ میں (این ٹی ایس) سے متعلق درخواستوں کی سماعت کی گئی ،جس میں درخواست گزارنے اپنےموقف کو بیان کرتےہوئے کہا کہ (این ٹی ایس) ٹیسٹ میرٹ پردیا گیا تھا،پیپرمنسوخ کرناغیرقانونی ہے،ہم ٹیسٹ میں پاس ہوئے،دوبارہ ٹیسٹ غیر قانونی ہے،عدالت سے استدعا ہے کہ سندھ حکومت کے دوبارہ پیپر لینے کے نوٹیفکیشن کو کالعدم قرار دیا جائے۔
عدالت نے دلائل سننے کے بعد (این ٹی ایس) کے نتائج کو برقرار رکھنے کا حکم دیتے ہوئے وزیراعلیٰ سندھ کا نوٹیفکیشن کالعدم قرار دے دیا اور اپنے ریمارکس میں کہا ہے کہ کوئی فریق چاہے توسپریم کورٹ سے رجوع کرسکتاہے۔
واضح رہے کہ وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے دوبارہ امتحان لینے سے متعلق نوٹیفکیشن جاری کیا تھا جبکہ میڈیکل کے طلبہ نے

این ٹی ایس) ٹیسٹ کی منسوخی کیلئے عدالت سے رجوع کر رکھا تھا۔)


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.