روپے کی قدر میں کمی سے معاشی چیلنجز بڑھ جائیں گے، لاہور چمبر کے صدر ملک طاہر

لاہور(سٹاف رپورٹر) لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر ملک طاہر جاوید، سینئر نائب صدر خواجہ خاور رشید اور نائب صدر ذیشان خلیل نے ڈالر کی قیمت میں تیزی سے اضافے پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ اگر فوری اقدامات نہ اٹھائے گئے تو اس سے معاشی پہیہ بری طرح متاثر ہوگا۔ ایک بیان میں لاہور چیمبر کے عہدیداروں نے کہا کہ روپے کی قدر میں کمی سے صنعتی پیداوار میں کمی ہوگی، قرضوں میں ازخود اضافہ ہوجائے گا، برآمدات مزید مشکلات کا شکار ہونگی، افراط زر کی شرح بڑھ جائے گی اور عوام کی قوت خرید کم ہوگی جس سے معاشی چیلنجز بڑھ جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ پالیسی سازوں کو ان عوامل کو تلاش کرنا چاہیے جن کی وجہ سے پاکستانی روپیہ کمزور ہورہا ہے ، یہ جائزہ لینا بھی ضروری ہے کہ کہیں ڈالر کی قیمت میں مصنوعی اضافہ تو نہیں کیا جارہا۔ لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے عہدیداروں نے کہا کہ ڈالر کی قیمت میں تیزی سے اضافے کے منفی اثرات سے صنعت و تجارت اور زراعت سمیت کوئی بھی محفوظ نہیں رہے گا، پاکستان کو ضروریات پوری کرنے کے لیے تیل کے علاوہ کھادیں، اشیائے خورد و نوش، مشینری اور صنعتی خام مال درآمد کرنے پڑتے ہیں ، یہ تمام اشیاءمہنگی ہوجائیں گی جس سے تمام طبقات متاثر ہونگے۔ انہوں نے کہا کہ معیشت پہلے ہی دباﺅ میں ہے اور یہ مزید دباﺅ برداشت کرنے کی متحمل نہیں ہوسکتی لہذا حکومت کو ہنگامی بنیادوں پر اقدامات اٹھانا ہونگے۔ انہوں نے کہا کہ روپے کے استحکام سے نہ صرف معیشت کو فائدہ ہوگا ۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.