لاہورچڑیا گھرمیں جنگل کےبادشاہوں کی پراسراہلاکتیں، دو کےبعد تیسرا شیربھی پراسرارطورپرہلاک

لاہور: لاہور چڑیا گھر میں جنگل کے بادشاہوں کی پراسرا ہلاکتیں، دو کے بعد تیسرا شیر بھی پراسرار طور پر ہلاک ۔تفصیلات کے مطابق لاہور چڑیا گھر میں آئے روز شیروں کی اموات ہونے لگیں۔چند روز قبل دو ننھے شہروں کی ہلاکت  کے بعد بنگال ٹائیگرس بھی چل بسی لاہور چڑیا گھر تینوں شیروں کی ہلاکتیں رات کے وقت ہوئین، یہ عجب اتفاق ہے یا کوئی راز؟شیر مر رہے ہیں یا غیب کئے جارہے ہیں انتظامیہکی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے؟لاہور چڑیا گھر کے ڈائریکٹر حسن علی سکھیرا کا کہنا ہے کہ بنگال ٹائیگریس آج شام اپنے پنجرے کے باہر خندق میں مردہ پائی گئی۔بنگال ٹائیگریس بلڈ پیراسائٹس کے مرض میں مبتلا تھی، علاج کے بعد وہ بظاہر صحتمند ہو گئی تھی مرنے والی بنگال ٹائیگریس کی عمر آٹھ سال تھی جو بہاولپور چڑیا گھر میں پیدا ہوئی اور اسے 2014 میں لاہور چڑیا گھر لایا گیاشہریوں کا کہنا ہے کہ انتظامیہ چڑیاگھرکے پنجروں کوویران کیوں کررہی ہے جبکہ انتظامیہ شیروں سمیت دیگرجانوروں کی حفاظت میں ناکام ہوچکی ہے۔

 


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.