پینے کے صاف پانی کی فراہمی سکیمیں پسماندہ علاقوں کی ضرورت ہے‘ ڈاکٹرفہمیدہ مرزا

اسلام آباد: سابق سپیکر قومی اسمبلی ڈاکٹر فہمیدہ مرزا نے کہا ہے کہ جن منصوبوں میں پچاس فیصد سے زائد کام ہو چکا ہے ان منصوبوں کو روکنا ملک کی بدقسمتی ہے۔ جمعہ کو قومی اسمبلی میں نکتہ اعتراض پر انہوں نے کہا کہ جن ترقیاتی سکیموں پر 50 سے 70 فیصد کام ہو چکا ہے ان پر کام روکنا ملک کی بدقسمتی ہے۔ پینے کے صاف پانی کی فراہمی کی سکیمیں پسماندہ علاقوں کی ضرورت ہے۔ اگر ہم عدلیہ کا دروازہ نہیں کھٹکھٹائیں گے تو کون ہماری شنوائی کرے گا۔ بدین میں نکاسی آب اور پینے کے صاف پانی کی فراہمی کے منصوبوں کو جلد از جلد مکمل کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ سپیکر کو پارلیمنٹ کی بالادستی کے لئے اپنی کرسی چھوڑنے کی بجائے ایگزیکٹو کو پابند کرکے قواعد کے تحت ان کے خلاف ایکشن لینا چاہیے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.