ڈاکٹرشاہد مسعود نے تحقیقات کونقصان پہنچایا، پنجاب حکومت

لاہور:  ترجمان پنجاب ملک احمد خاں نے کہا ہے کہ ڈاکٹر شاہد مسعود نے زینب قتل کے کیس کے ملزم عمران علی کے غیر ملکی بینک اکا ﺅ نٹس کا الزام لگایا ،ان کی خبر بالکل من گھڑت اور جھوٹی ہے، انہوں نے انوسٹی گیشن کو ڈی ٹریک کرنے کی کوشش کی،اب اس معاملے کا فیصلہ سپریم کورٹ نے کرنا ہے،حکومت پنجاب کی جانب سے ڈاکٹڑ شاہد مسعود کو قانونی نوٹس بھیج دیا ہے ۔ جمعہ کو ترجمان پنجاب حکومت نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ معروف اینکر پرسن ڈاکٹر شاہد مسعود نے زینب قتل کے کیس کے ملزم عمران علی کے غیر ملکی بینک اکانٹس کا الزام لگایا تھا جس پر سپریم کورٹ نے از خود نوٹس لیتے ہوئے معاملے کی تحقیقات کا کہا تھا۔ انہوں نے کہاکہ وزیرِ اعلی پنجاب میاں محمد شہباز شریف نے اس معاملے پر کمیٹی بنائی تھی۔ زینب قتل کیس کے ملزم عمران علی کے نام پر لوکل اور فارن اکا ﺅ نٹس کو چیک کیا گیا لیکن ملزم کے نام کا کوئی بینک اکانٹ نہیں ملا، سٹیٹ بینک نے اپنی فائنڈنگ دیدی ہیں، ملزم کے بینک اکانٹس سے متعلق ڈاکڑ شاہد مسعود کی خبر بالکل من گھڑت اور جھوٹی ہیں، انہوں نے انوسٹی گیشن کو ڈی ٹریک کرنے کی کوشش کی۔ترجمان پنجاب حکومت نے کہا کہ ڈاکٹر شاہد مسعود کو دو بار طلب کیا گیا لیکن وہ کمیٹی کے سامنے پیش نہیں ہوئے۔ نجی ٹیلی وژن کے اینکر پرسن کی خبر من گھڑت اور جھوٹی ہے، اب اس معاملے کا فیصلہ سپریم کورٹ نے کرنا ہے جبکہ جن وزرا کا نام لیا گیا انھیں قانونی کارروائی کرنے کا حق حاصل ہے۔ جھوٹے الزامات پر حکومت پنجاب کی جانب سے ڈاکٹڑ شاہد مسعود کو قانونی نوٹس بھیج دیا گیا ہے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.