Daily Taqat

نیب ریفرنسز وکیل صفائی کا حسین نواز کے انٹرویوز کی فراہم کردہ سی ڈیز پراعتراض

اسلام آباد : احتساب عدالت میں ایون فیلڈ ریفرنس کی سماعت کے دوران نواز شریف کے وکیل نے نیب کی جانب سے حسین نواز کے انٹرویوز کی فراہم کردہ سی ڈیز پر اعتراض اٹھا دیا۔ بدھ کو احتساب عدالت کے جج محمد بشیر سابق وزیراعظم نواز شریف، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور  داماد کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر کے خلاف نیب کی جانب سے دائر ایون فیلڈ پراپرٹیز ریفرنس کی سماعت کی ۔نامزد تینوں ملزمان کی کمرہ عدالت میں موجودگی میں نیب کی جانب سے مختلف نجی چینلز کے پروگرامز کی سی ڈیز کمرہ عدالت میں چلا کر دکھائی گئیں۔اس سے قبل نواز شریف کے وکیل خواجہ حارث نے دلائل میں کہا کہ نیب کی جانب سے فراہم کیے گئے انٹرویوز کی 3 سی ڈیز خراب ہیں، ہم نے سی ڈیز چلائیں تو فارمیٹ سپورٹ نہ کرنے کا میسج آرہا تھا۔ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل نیب سردار مظفر عباسی نے مختلف نجی چینلز کے پروگرامز کی سی ڈیز کمرہ عدالت میں چلا کر دکھائیں اور نواز شریف کے وکیل کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ مبارک ہو خواجہ صاحب سی ڈیز چل گئیں۔جس پر وکیل خواجہ حارث نے کہا کہ آپ کو مبارک ہو، آپ کی دی گئی سی ڈیز یہاں چل گئی ہیں۔سماعت کے دوران استغاثہ کے گواہ محمد عبدالواحد جو وزارت اطلاعات کے ڈائریکٹوریٹ آف الیکٹرانک میڈیا اینڈ پبلیکیشن کے ڈی جی ہیں نے کہا کہ پی ٹی وی پر نواز شریف کا قوم سے خطاب، قومی اسمبلی میں تقاریر کی سی ڈیز اور متن بھی نیب کو دیا تھا۔سپریم کورٹ کے پاناما کیس سے متعلق 28 جولائی کے فیصلے کی روشنی میں نیب نے شریف خاندان کے خلاف 3 ریفرنسز احتساب عدالت میں دائر کئے ہیں جو ایون فیلڈ پراپرٹیز، العزیزیہ اسٹیل ملز اور فلیگ شپ انویسمنٹ سے متعلق ہے۔نیب کی جانب سے ایون فیلڈ اپارٹمنٹس ریفرنس میں سابق وزیراعظم نواز شریف ان کے بچوں حسن، حسین ، بیٹی مریم نواز اور داماد کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر کو ملزم ٹھہرایا ۔العزیزیہ اسٹیل ملز جدہ اور 15 آف شور کمپنیوں سے متعلق فلیگ شپ انوسٹمنٹ ریفرنس میں نواز شریف اور ان کے دونوں بیٹوں حسن اور حسین نواز کو ملزم نامزد کیا گیا ہے۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »