فکری لام بندی

آج یہاں بھارتی مقبوضہ کشمیر اور لائن آف کنٹرول پر بھارتی بر بریت اور معصوم بچوں کے قبل کے خلاف ایک بڑا مظاہرہ ہوا۔ مظاہرین نے ان بچوں کی تصاویر اٹھائی ہوئی تھیں جو بھارتی فوجیوں کی پیلٹ گنوں سے بینائی کھو چُکے ہیں اور جو بچے لائن آف کنٹرول پر اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں ایک مقرر نے جلوس سے خطاب کرتے ہوئے جب کہا۔
” اگر تحریک آزادی کا مطلب صرف کشمیریوں کے معصوم بچے مروانا ہے تو تحریک کامیاب جارہی ہے اور اگر اس کا مقصد آزادی¿ کشمیر ہے تو ہم گزشتہ 70 سال سے اِس منزل کی جانب ایک قدم بھی نہیں بڑھا ہے ، ان قربانیوں کے رائیگاں جانے کا کون ذمہ دار ہے ؟؟؟“
مقرر ابھی انہیں الفاظ پر پہنچا تھا کہ منتظمین نے اُسے سٹیج اتار دیا کہ اس کی” فکری لام بندی“ ابھی خام ہے ۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.