سانحہ قصور میں سوفیصد حقائق پر مبنی انوسٹی گیشن یقینی بنائی جائےگی، وزیراعلیٰ پنجاب

لاہور: وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کی زیرصدارت یہاں کابینہ کی سب کمیٹی برائے امن و امان کا اجلاس منعقد ہوا ۔وزیراعلیٰ شہبازشریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سانحہ قصور میں سوفیصد حقائق پر مبنی انوسٹی گیشن یقینی بنائی جائے گی۔جے آئی ٹی پروفیشنل انداز میں تفتیش کر رہی ہے۔جے آئی ٹی کی تفتیش میں غلطی اور کوتاہی کا احتمال ہرگز نہیں ہونا چاہیئے۔تفتیش میں بہترین پیشہ ورانہ صلاحیتوں کو بروئے کار لایا جائے۔قصور میں زینب
کےساتھ ظلم پوری قوم کےلئے لمحہ فکریہ ہے۔ ایسے واقعات کے سدباب کےلئے معاشرے کا ہر فرد اپنی سماجی ذمہ داری ادا کرے۔اگر کسی کے پاس زینب قتل کیس کے بارے میں شواہد موجود ہیں تو جے آئی ٹی سے رابطہ کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ زینب قوم کی بیٹی تھی، قاتل کو انجام تک پہنچانے کے لئے بھرپور محنت کر رہے ہیں۔ زینب قتل کیس کے بارے میں ابہام پیدا کرنا تفتیش پر اثرانداز ہونے کے مترادف ہے اورزینب قتل کیس کی حساسیت کو مدنظر رکھتے ہوئے میڈیا اپنی سماجی ذمہ داری ادا کرے۔ملزم کی گرفتاری تحقیقاتی ٹیموں کی شبانہ روز محنت کا نتیجہ ہے۔معصوم زینب کےساتھ ہونےوالے ظلم اور زیادتی نے پوری قوم کو ہیجان میں مبتلا کر دیا تھا۔ انہوں نے کہاکہ کیس کی تحقیقات کےلئے سٹیٹ بینک، نادرا اور دیگر اداروں کے ریکارڈ سے مدد لی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ مردان کی عاصمہ بھی قوم کی بیٹی ہے، اس پر ہونےوالے ظلم پر بے حد رنجیدہ ہیں۔فرانزک لیب ریکارڈ میں عاصمہ کا ڈی این اے ٹیسٹ مکمل ہو چکا ہے، مزید تعاون کیلئے بھی تیار ہیں۔ صوبائی وزیر کرنل (ر) سردار ایوب گادھی، ترجما ن حکومت پنجاب ملک محمد احمد خان، مشیر رانا مقبول احمد، چیف سیکرٹری، انسپکٹر جنرل پولیس، ڈی جی پنجاب فرانزک سائنس ایجنسی، ایڈووکیٹ جنرل پنجاب، ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل اور دیگر متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت جبکہ صوبائی وزیر جہانگیر خانزادہ اٹک سے اور سٹیٹ بینک آف پنجاب کے ڈائریکٹر بینکنگ پالیسیز اینڈ ریگولیشن ڈپارٹمنٹ اختر جاوید ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شریک ہوئے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.