Daily Taqat

وزیر اعظم عمران خان کا پنجاب میں بلدیاتی نظام تبدیل کرنے کا حکم

لاہور: وزیر اعظم عمران خان نے پنجاب میں بلدیاتی نظام کو فوری تبدیل کرنے کی ہدایت کردی۔ پنجاب کابینہ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیرِاعظم عمران خان نے حکم دیا کہ 100 دن کے منصوبے پر عمل درآمد تیزی سے جاری رکھا جائے، صحت، تعلیم اور صاف پانی کی فراہمی کے شعبوں میں تبدیلی نظر آنی چاہیے۔ذرائع کے مطابق عمران خان نے اورنج لائن بس منصوبے کا فوری آڈٹ کروانے اور پنجاب میں بلدیاتی نظام کو فوری تبدیل کرنے کی ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا کہ تمام وزرا اپنے اپنے محکموں میں سادگی کو فروغ دیں۔دریں اثنا وزیر اعظم عمران خان نے وزیر اعلی سیکرٹریٹ میں پنجاب کے مختلف محکموں کے سیکریٹریز سے ملاقات کی۔ ملاقات میں وزیر اعلی پنجاب عثمان خان بزدار بھی شریک تھے۔وزیر اعظم نے سیکریٹریز سے کہا کہ موجودہ حالات میں مشکل فیصلے کرنا پڑیں  گے، بیورو کریسی کسی بھی ملک کو چیلنج سے نکالنے میں کلیدی کردار ادا کرتی ہے، موجودہ حالات میں ہماری بیورو کریسی کو دلجمعی سے کام کرنا ہوگا ہم بیورو کریسی کے کام میں مداخلت نہیں کریں گے۔

وزیراعظم نے مزید کہا کہ 60ءکی دہائی میں سول سروس نے پروفیشنلزم کی مثال قائم کی تھی، بیورو کریسی کو 60 کی دہائی کی طرح بے لوث، پر عزم اور پیشہ ورانہ انداز سے کام کرنا ہوگا، بیورو کریسی میں بہتری لانے پر کے پی کے میں غیر معمولی نتائج سامنے آئے ہیں، گورننس، سروس ڈلیوری، شفافیت اور میرٹ کو ہر سطح پر یقینی بنایا جائے گا۔دریں اثناء وزیراعظم عمران خان نے ملک کو درپیش معاشی چیلنجز سے نمٹنے کے لیے 18 رکنی اکنامکس ایڈوائزری کونسل تشکیل دے دی۔وزیر اعظم عمران خان نے ملکی معاشی مسائل سے نبرد آزما ہونے کے لیے 18 رکنی اقتصادی مشاورتی کونسل تشکیل دے دی جس کا نوٹی فکیشن جاری کردیا گیا۔ کونسل میں عالمی شہرت یافتہ پروفیشنلز معیشت داں شامل ہیں جن میں سے 7 ارکان کا تعلق سرکاری اور 11 کا تعلق نجی شعبے سے ہے۔ مشاورتی کونسل معاشی معاملات پر کپتان کی معاونت کرےگی۔

پرائیویٹ سیکٹر سے لیے گئے ارکان میں آئی بی اے کراچی کے ڈین اینڈ ڈائریکٹر ڈاکٹر فرخ اقبال، نیشنل یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کے اسکول آف سوشل سائنسز کے ڈین ڈاکٹر اشفاق حسن خان، لمز کے پروفیسر آف اکنامکس ڈاکٹر اعجاز نبی، سسٹین ایبل ڈویلپمنٹ اینڈ پالیسی انسٹی ٹیوٹ کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر ڈاکٹر عابد قیوم سلہری، پاکستان انسٹی ٹیوٹ آف ڈویلپمنٹ اکنامکس کے وائس چانسلر ڈاکٹر اسد زمان، لاہور اسکول آف اکنامکس کے پروفیسر ڈاکٹر نوید حامد، اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے سابق گورنر سید سلیم رضا اور معروف ماہر معاشیات ثاقب شیرانی بھی شامل ہیں۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »