Daily Taqat

شکاگو،پاکستانی قونصل خانہ میں یوم یکجہتی کشمیر کے حوالے سے تقریب

شکاگو : امریکی شہر شکاگو میں واقع پاکستانی قونصل خانے میں یوم یکجہتی کشمیر کے حوالے سے ایک تقریب کا انعقاد کیا گیا جس سے خطاب کرتے ہوئے مقررین کہا کہ پاکستان کشمیرکی بھارت سے آزادی تک کشمیریوں کی حمایت جاری رکھے گا۔ انھوں نے کہا کہ بھارت مقبوضہ وادی میں بڑے پیمانے پر انسانی حقوق کی پامالیاں جاری رکھے ہوئے ہے اور عالمی برادری کو دیرینہ مسلہ کشمیر کو حل کرانے کیلئے اپنا کردار دار کر نے کی ضرورت ہے۔ تقریب میں پاکستانی اور کشمیری نژاد امریکی سکالرز کی بڑی تعداد موجود تھی۔ اس موقف پر خطاب کرتے ہوئے قونصل جنرل فیصل نیاز ترمذی نے کہا کہ بھارت نے کشمیر کو دنیا کے سب سے زیادہ عسکریت پسند خطے میں تبدیل کر دیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ سات دہائیاں گزرنے کے بعد بھی بھارت نے مقبوضہ جموں و کشمیر کے لوگوں کو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کے مطابق حق خودمختار نہیں دیا ہے۔ قونصل جنرل نے کہا کہ بھارتی افواج کشمیریوں کے حق خود ارادیت کے حصول کے جذبہ کو طاقت کے زور سے نہیں دبا سکتی۔ انھوں نے کہا کہ بھارتی فوج بندوقوں کے غیرانسانی استعمال سے200 زائد لوگوں کو اندھا جبکہ خواتین اور نوجوان بچوں کو معذور کر چکی ہے۔ انہوں نے حریت کے رہنماوں کی جدوجہد کے خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ یاسین ملک نے بھارتی وزیر خارجہ ششما سوراج کو کھلے خط میں بھارت کو اس کی منافقت یاد دلائی ہے کہ وہ خود تو اپنے جاسوس کلبھوشن یادیو سے دہشت گردی کرا رہا ہے جبکہ سینکڑوں کشمیریوں کو بے گناہ جیلوں میں قید کررکھا ہے جس میں یاسین ملک خود بھی شامل ہیں اور کئی کشمیریوں کو پھانسی پر چڑھا دیا گیا ۔ قونصل جنرل نے کہا کہ پاکستان مسئلہ کشمیر کے پرامن حل تک کشمیریوں کی اخلاقی، سیاسی اور سفارتی حمایت جاری رکھے گا۔ اس موقع پر ڈاکٹر رضوان قادراور بابر راٹھور نے خطاب کرتے ہوئے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی جانب سے کیے جانے والے مظالم کو تنقید کا نشانہ بنایا اور شرکاءکو مسئلہ کشمیر کے تاریخی پس منظر سے آگاہ کیا۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »