کنٹرول لائن پربھارت کی بلااشتعال فائرنگ ،پاک فوج کے4جوان شہید

راولپنڈی /کوٹلی : کنٹرول لائن پر بھارت کی بلا اشتعال فائرنگ ،پاک فوج کے4جوان شہید،جوابی کارروائی میں3بھارتی اہلکار جہنم واصل ،متعدد زخمی،بھارتی فوج نے کنٹرول لائن کے جندروٹ اور کوٹلی سیکٹرز میں فائرنگ کی ،پاک فوج کا منہ توڑ جواب،دشمن کی سرحدی چوکیاں تباہ کر دیں ۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ(آئی ایس پی آر)کے مطابق بھارتی فورسز نے لائن آف کنٹرول پر ایک بار پھر سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزی کی ہے۔آئی ایس پی آر کے مطابق بھارتی فورسز نے کنٹرول لائن پر جنڈروٹ اور کوٹلی سیکٹرز میں بلا اشتعال فائرنگ کی جس کے نتیجے میں پاک فوج کے 4 جوان شہید ہوگئے۔آئی ایس پی آر کے مطابق بھارتی فوج کی اشتعال انگیزی پر پاک فوج کے جوانوں نے بھی بھرپور جوابی کارروائی کی جس سے بھارتی فوج کے 3 اہلکار ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔پاک فوج نے بھارت کی متعدد سرحدی چوکیاں بھی)
تباہ کر دیں ۔پاک فوج کے منہ توڑ جواب کے بعد دشمن کی گنیں خاموش ہو گئیں۔بھارت کی جانب سے شدید گولہ باری کی گئی ۔بھارتی فوج نے مارٹر گولوں کا بھی استعمال کیا۔ رپورٹس کے مطابق پاک فوج کے جوانوں پر فائرنگ اس وقت کی گئی جب وہ لائن آف کنٹرول پر کمیونی کیشن لائن کی مرمت کررہے تھے۔ذرائع کے مطابق پاکستان نے بھارتی اشتعال انگیزی پر شدید احتجاج کا فیصلہ کیا ہے اور پاکستان میں تعینات بھارتی ہائی کمشنر کو طلب کرکے احتجاج کیا جائے گا۔واضح رہے کہ گزشتہ سال بھارتی سیکیورٹی فورسز نے 1900 مرتبہ جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی۔خیال رہے کہ ایل او سی پر جنگ بندی کے لیے 2003 میں پاکستان اور بھارتی افواج کی جانب سے ایک معاہدے پر دستخط کیے گئے تھے تاہم اس کے باوجود جنگ بندی کی خلاف ورزی کا سلسلہ وقفے وقفے سے جاری ہے۔نومبر 2017 میں پاکستان رینجرز اور بھارتی بارڈر سیکیورٹی فورسز کے اعلی حکام کی ملاقات میں 2003 کے معاہدے پر عمل درآمد کی یقین دہانی کے باوجود بھارت کی جانب سے مسلسل خلاف وزری جاری ہے۔ رواں ماہ 4 جون کو بھی بھارتی فوج کی جانب سے ورکنگ بانڈری پر پاکستانی علاقے میں بلا اشتعال فائرنگ کے نتیجے میں 3 شہری زخمی ہوگئے تھے۔اس سے قبل 25 اگست 2017 کو بھی لائن آف کنٹرول پر بھارتی فورسز کی بلااشتعال فائرنگ سے پاک فوج کے 3 اہلکار شہید اور ایک زخمی ہوگیا تھا۔

 


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.