عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمت پھر گر گئی

عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمت میں ایک بار پھر کمی واقع ہوئی ہے۔ ٹریڈنگ کے دوران برینٹ کروڈ کی قیمت 58 سینٹ کمی کے بعد 29 اعشاریہ 4 ڈالر فی بیرل تک گر گئی۔

خبر رساں ایجنسی بلومبرگ کے مطابق عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمتوں میں ایک بار پھر گراوٹ دیکھنے میں آئی ہے۔ یو ایس کروڈ 39 سینٹ کمی کے بعد 25 اعشاریہ 39 ڈالر فی بیرل کی سطح پر آگیا ہے۔ ماہرین کے مطابق قیمتوں میں حالیہ کمی کا سبب کرونا کے پھیلاؤ کی دوسری لہر آنے کے خدشات ہیں۔


کرونا وائرس کی دوسری لہر کے خدشات کی وجہ مختلف ملکوں کی جانب سے لاک ڈاؤن میں نرمی کے اقدامات ہیں۔ ان خدشات کی وجہ سے تیل کی قیمتوں میں ہوئی گراوٹ نے سعودی عرب کی جانب سے پیدوار میں کمی کے اعلان کا مثبت اثر بھی زائل کر دیا ہے۔

کرونا وائرس کے پھیلاؤ کی دوسری لہر آنے کے خدشات کا سبب چین اور جنوبی کوریا سے آنے والی خبریں ہیں جن کے مطابق متاثرہ علاقوں میں دوبارہ کرونا وائرس پھیلنا شروع ہوگیا ہے۔

دوسری جانب سعودی عرب نے تیل پیداوار میں 1 ملین بیرل یومیہ مزید کمی کرنے کا اعلان کیا ہے۔ فیصلہ شاہ سلمان کی زیر صدارت کابینہ کے ویڈیو لنک اجلاس میں کیا گیا۔ سعودی کا بینہ کا کہنا ہے کہ اوپیک پلس میں شامل ممالک کو تیل کی پیداوار مزید کم کرنے کی ضرورت ہے۔

شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے کہا کہ تیل کی پیداوار میں کمی پر عمل کریں تاکہ عالمی مارکیٹ میں توازن رہے۔ کابینہ کے مطابق سعودی عرب جون سے ایک ملین بیرل یومیہ تیل کی پیداوار مزید کم کرے گا، جب کہ رواں ماہ بھی اضافی کمی پر عمل درآمد کرنے کی کوشش کی جائے گی


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.