شمسی توانائی کےمنصوبوں میں بھاری شرح سودکاانکشاف

اسلام آباد: شمسی توانائی کے منصوبوں کیلئے بھاری شرح سود پر قرض لینے کا انکشاف ہواہے۔قومی خزانے پر23ارب روپے کا بوجھ ڈال دیا گیا۔

نیپرا دستاویز کے مطابق بہاولپور اور سکھرمیں تین سو پچاس میگاواٹ کے پانچ پاور پلانٹس پینتیس ارب روپے قرض لے کر بنیں گے ۔ چار اعشاریہ چھ فیصد سود کے ساتھ پندرہ سال میں اٹھاون ارب واپس کیے جائیں گے ۔

سولر پاور پلانٹس پر ادا کی جانے والی شرح سود ایل این جی پلانٹس سے بھی زیادہ ہے۔ایل این جی پلانٹس کیلئے قرض پر سود کی شرح ساڑھے تین فیصد ہے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.