سوئی ناردرن گیس مہنگی کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد: سوئی ناردرن گیس کو 69 ارب روپے کا ریونیو شارٹ فال پورا کرنے کیلئے آر ایل این جی کی قیمتوں میں اضافے کی منظوری دے دی گئی ہے۔

کمیٹی نے وزارت صنعت و پیداوار کی یوٹیلٹی اسٹورز پر پانچ اشیاء کی قیمتوں میں اضافے کی سمری واپس بجھوا دی اور ٹریڈنگ کارپوریشن کو مزید 3 لاکھ 20 ہزار میٹرک ٹن گندم درآمد کرنے کی بھی اجازت دے دی ہے۔‏روس سےدرآمدی3لاکھ30ہزارٹن گندم پنجاب، کے پی کے اور پاسکو میں تقسیم کی جائے گی۔ مشیر خزانہ کی زیرصدارت ای سی سی اجلاس، سوئی ناردرن گیس صارفین کیلئے گیس مہنگی کرنے کی منظوری دے دی گئی۔ اجلاس میں سوئی ناردرن گیس کو 69ارب روپے کا ریونیو شارٹ فال پورا کرنے کیلئے آر ایل این جی کی قیمتوں میں اضافے منظوری دی گئی۔ 69ارب روپے کی یہ ریکوری گزشتہ 5 سال میں آر ایل این جی کی قیمتوں میں اضافے کی مد میں دی گئی ہے۔

اجلاس میں اوگراکوآرایل این جی پرنئےسی این جی اسٹیشنزکو لائسنس جاری کرنے منظوری دی گئی۔ ‏نئےسی این جی اسٹیشنزقائم کرنےپر2008میں پابندی عائدکی گئی تھی،جبکہ عوام کیلئے یوٹیلٹی اسٹورز پر چینی آٹا اور گھی سمیت پانچ اشیاء کی قیمتوں میں اضافے کی سمری واپس وزارت صنعت و پیداوار کو بجھوا دی گئی۔ ای سی سی نے سوئی ناردرن کو موسم سرما میں گھریلو اور کمرشل شارٹ فال کو آر ایل این جی کے ذریعے پورا کرنے کی اجازت بھی دی جب کہ اوگرا کو آر ایل این جی بیسڈ سی این جی اسٹیشنوں کے لائسنس جاری کرنے کی بھی اجازت دے دی۔

علاوہ ازیں کےالیکٹرک نے نیپرا سے 1 روپیہ 54 پیسے ٹیرف بڑھانے کی منظوری مانگ لی، موقف اختیار کیا کہ ٹیرف نہ بڑھایا تو سرمایہ کاری نہیں کر سکیں گے۔ آئندہ سال سسٹم اپ گریڈ کرنےکیلئے33ارب اور بن قاسم تھری پاور پلانٹ کیلئے 100 ارب روپے سے زائد درکار ہیں۔ اتھارٹی کی جانب سے درخواست پر ابھی تک سماعت نہیں ہوئی۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.