Daily Taqat

پیٹرولیم مصنوعات کی قیمت میں اضافے کے ساتھ مہنگائی کا نیا طوفان

پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں بے پناہ اضافے کے باعث اوپن مارکیٹ میں مہنگائی کا نیا طوفان آگیا ہے، جس سے عوام کی چیخیں نکل گئیں۔ پٹرول کی قیمت میں اضافے کے اوپن مارکیٹ پر فوری منفی اثرات مرتب ہوئے۔ جس سے تمام اشیائے خورد و نوش، سبزیوں، پھلوں کی قیمتوں میں اضافہ ہوا، گھی کی قیمت میں 3 روپے کلو اضافہ، چاول کی قیمت 5 روپے کلو بڑھ گئی۔

دودھ اور دہی بھی 5 روپے کلو مہنگا ہوگیا، تمام دالوں کی قیمتوں میں 3 روپے سے 5 روپے کا مزید اضافہ کر دیا گیا، جبکہ 5 نومبر سے تمام ملٹی نیشنل کمپنیوں نے بھی اپنی مصنوعات کی قیمتوں کے نئے اضافہ شدہ ریٹ جاری کردیے۔ اوپن مارکیٹ میں ہرقسم کے صابن کی ٹکیہ کی قیمت 5 روپے سے 7 روپے ہر قسم کے سرف کی قیمت میں 10 روپے کا اضافہ کیا گیا ہے۔

گھریلو سلنڈر گیس کی قیمت میں 165 روپے اور کمرشل سلنڈر کی قیمت میں 673 روپے کی کمی بھی کی گئی ہے۔ قیمتیں بڑھنے کے بعد ملک کے مختلف حصوں میں انڈے 110 تا 144 روپے فی درجن، جبکہ شیور مرغی 160 تا 180 روپے سے کلو کر دی گئی، پبلک ٹرانسپورٹ کے کرایوں میں بھی بے تحاشا اضافہ کیا گیا ہے۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »