Latest news

”نیا پاکستان“ملکی ترقی کے لئے تحریک انصاف حکومت کے اقدامات

کسی بھی ملک میں کامیا ب طرز حکمرانی کے لئے ضروری ہے کہ وہاں کے عوام اپنے حکمرانوں کی کارکردگی سے مطمئن ہوں بدقسمتی سے پچھلے 70 سالوں میں ملک میں کسی بھی حکومت کو یہ توفیق نصیب نہ ہوسکی جس کی بناءپر انہیں حقیقی طورپر عوام کی نمائندہ حکومت کی مسند پر بٹھایا جاسکے ، مسلسل محرومیوں کا شکار عوام کو حالیہ دہائی کے دوران پاکستان تحریک انصاف کی صورت میں ایک ایسی جماعت دیکھنے کو ملی جو کسی حد تک اس ملک وقوم کی بہتری کی بات کررہی تھی اور یہی 2018 کے عام انتخابات میں پاکستان تحریک انصاف کی کامیابی کا باعث بنا۔اس سے قبل سال پاکستان تحریک انصاف خیبر پختونخوا میں اپنی پانچ سالہ دور حکومت میں کچھ ایسے اقدامات کرچکی تھی جس کی بناءپر برسوں کی محرومیوں کی شکار عوام کو کچھ امید ہوچلی تھی کہ وہ مستقبل میں مرکزی سطح پر بھی کچھ ڈیلیور کرپائے گی پاکستان تحریک انصاف کی کامیابی کی اصل وجہ عمران خان کے نئے پاکستان کا خواب ہے، عمران خان کی حکمت عملی کی وجہ سے نئے پاکستان کا نعرہ لوگوں میں مقبول ہواکیونکہ پاکستان میں عوام نظام کی تبدیلی چاہتے تھے ایک ایسا نظام جہاں پر میرٹ کی بلادستی ہو انصاف کے تقاضوں کو پور ا کرکے سب کے لئے یکساں سہولیات فراہم کئے جاسکیںاور سب سے بڑی بات بے روزگار نوجوانوں کے لئے روزگار کے مواقع پیدا کئے جائیں تاکہ ان کی برسوں کی محرومیوں کا خاتمہ ہوسکے۔ الیکشن 2018 کے نتیجے میں بننے والی حکومت اور عمران خان کے ویژن اور کوششوں کے بدولت اب اداروں کی کارکردگی میں بہتری آرہی ہے۔ دعوے سے کہا جاسکتا ہے کہ خیبر پختونخوامیں پانچ سالہ دور حکومت میں اس بات کو یقینی بنایا گیا کہ پولیس فورس کو اپنی خدمات آزادانہ طورپر انجام دینے کے لئے ہر قسم کی سیاسی مداخلت سے آزاد کرنا ایک ایسا کارنامہ ہے جو دیگر صوبوں کے لئے قابل تقلید ہے اور وہ ان اقدامات کو اپنے لئے مثال بناکر اسی طرز کے اقدامات کے متمنی ہیں۔ کہ عوام نے تحریک انصاف پر جس اعتماد کا اظہار کیا ہے اسے موجودہ حکومت پر بھاری ذمہ داری عائد ہوگئی ہے کہ وہ مرکز کے ساتھ ساتھ اس صوبے کے عوام کو اس اعتماد کا بھر پور جواب دیں تاکہ مستقبل میں ایک بار پھر یہاں کے لوگ اسے اسی طرح کامیابی سے ہمکنار کرتے رہیں۔ اس وقت خیبر پختونخوا کو جن مسائل کا سامنا ہے ان میں امن امان کے ساتھ روزگار اور صاف پانی کی فراہمی اہم ہیں جس پر توجہ دینے کے لئے حکومتی اقدمات جاری ہیں ، اس مد میں مالی وسائل آڑے آرہے ہیں لیکن اس حوالے سے یہ بات خوش آئند ہے کہ خوش قسمتی سے اللہ تعالیٰ نے خیبر پختونخوا کو بہترین قسم کے معدنیات کی دولت سے مالا مال کیا ہوا ہے لہذا اگر ان سے استفادہ کیا جائے تو صوبے کے مسائل خود اس کے وسائل سے بہ خوبی حل کئے جاسکتے ہیں اب کی بار صوبائی حکومت نے خیبر پختونخوا کے اہم سیاحتی علاقوں پر توجہ مرکوز کرکے ہر سال چار نئے سیاحتی مقامات دریافت کرنے اور ان سیاحتی مقامات کو ملکی وغیر ملکی سیاحوں کے لئے پرکشش بنانے کےلئے کئی طرح کے اقدامات اٹھانے کا اعلان کردیا ہے جس میں ان نئے دریافت شدہ علاقوں تک اعلیٰ تعمیراتی خصوصیات کی حامل سڑکوں کی تعمیر کا سلسلہ شروع کردیا گیا ہے جس سے اگر ایک جانب ان علاقوں میں آنے والے سیاحوں کو سہولیات حاصل ہوں گی اور وہ قدرت کی خوبصورت نظاروں سے لطف اندوز ہوسکیں گے تو دوسری جانب ان علاقوں کے مقامی باشندوں کو روزگار کے مواقع بھی میسر آسکیں گے جس سے ان علاقوں میں بے روزگاری کا خاتمہ ہوگا اور وہاں کے لوگوں کے معاشی مسائل بخوبی حل ہوں گے، اسی طرح دوبارہ اقتدار میں آنے کے بعد صوبائی حکومت نے اپنے پچھلے اقدامات کو دوام بخشتے ہوئے محکمہ تعلیم کے شعبے کی ترقی پر بھی توجہ مرکوز کررکھی ہے پچھلی صوبائی حکومت میں خیبر پختونخوا کے پسماندہ علاقوں کت سکولوں کے لئے نئے چالیس ہزار سے زائد اساتذہ بھرتی کئے جس کے نتیجے میں ان علاقوں کے سکولوں میں اساتذہ کی کمی مسئلہ کافی حدتک حل ہوچکا ہے اور وہ سکول جو سال کے بیشتر مہینوں تک بند رہتے تھے اور ان سکولوں میں پڑھنے والے بچے صبح سکول آنے کے بعد بغیر پڑھے واپس جانے پر مجبور رہتے تھے لیکن اب ان سکولوں میں درس وتدریس کا سلسلہ پوری طرح جاری ہے جو تحریک انصاف(جاری ہے)


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.