اہم خبرِیں
مریخ پر پانی سے بھرے سمندرکبھی نہیں تھے، سائنسدان گلوکار بلال سعید نے مسجد میں گانے کی ریکارڈنگ پر معافی مانگ لی ایران پر اسلحے کی پابندی میں توسیع کی جائے، عرب ممالک بل گیٹس نے پاکستان کی کورونا کے خلاف کامیابی کو تسلیم کر لیا کورونا سے نمٹنے میں پاکستان دنیا کے لیے مثال ہے، اقوام متحدہ مسجد وزیرخان میں گانے کی عکس بندی، منیجر اوقاف معطل چمن، بم دھماکہ 5 افراد جاں بحق، متعدد زخمی حب ڈیم، پانی کی سطح میں ریکارڈ اضافہ لاک ڈاؤن کے بعد کراچی میں تفریحی مقامات کھل گئے سپریم کورٹ کا کراچی سے تمام بل بورڈز فوری ہٹانے کا حکم پاکستان کو اٹھارویں ترمیم دی اس لیے مقدمات بن رہے ہیں، ، زردار... وفاق کے اوپر کوئی وزارت نہیں بن سکتی، اسلام آباد ہائی کورٹ پاکستان پوسٹ آن لائن سسٹم سے منسلک اختیارات کا ناجائز استعمال، چیئرمین لاہور ویسٹ مینجمنٹ کمپنی ر... موسمیاتی تبدیلیوں کی وجہ سے گندم کی پیداوارکم ہوئی، وزیراعظم اسٹاک مارکیٹ، کاروباری حجم 4 سال کی بلندترین پرپہنچ گیا سائنسی انقلاب، مرے ہوئے شخص سے "حقیقی ملاقات" ممکن آمنہ شیخ نے دوسری شادی کرلی؟ آئی سی سی کی نئی ٹیسٹ رینکنگ جاری افغانستان لویہ جرگہ، 400 طالبان کی رہائی کی منظوری

“الخالد ٹینک” جو اسلامی دنیا کے عظیم اور نڈر سپاہی سے موسوم ہے

لاہور: “الخالد”( ٹی 90 ٹینک) اسلامی دنیا کے عظیم سپہ سالار اور جرنیل حضرت خالد بن ولیدؓ سے موسوم ہے جسے پاکستان میں ٹیکسلا کی ہیوی ری بلڈ فیکٹری میں تیار کیا گیا تھا۔

الخالدٹینک پاکستانی فوج کا نیا اور جدید ترین ٹینک ہے۔ یہ 400 کلومیٹر دور تک بغیر کسی مزاحمت سفر کر سکتا ہے۔ اس کے اندر ایک 1200 HP یوکرین کا بنایا گیاانتهائ جدید انجن نصب ہے۔ یہ 70 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے چل سکتا ہے۔ اس کا عمله تین آدمیوں پر مشتمل هوتا ہے ـ الخالد ٹینک کا افتتاح پاکستان میں صدر جنرل ضیاءالحق 1988ء میں کیا.

اس میں ایک عدد 125 ملی میٹر سموتھبور توپ نصب ہوتی ہے۔ اس کے علاوہ اس میں ایک مشین گن اس کی چھت پر اور ایک نیچے بھی لگی ہوتی ہے۔ اس کی توپ 200 میٹر سے لیکر 2000 میٹر تک کے دشمن کو نشانہ بنا سکتی ہے۔ اس میں روس کا بنایا گیا گولہ لگانے والا خودکار نظام نصب ہے۔ یہ پانچ میٹر گہرے پانی میں سے بھی گزرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ یہ ٹینک چین اور یوکرین کی مدد سے پاکستان میں بنایا جا رہا ہے۔

چین کے اشتراک سے تیار کردہ اس ٹینک کو پاکستانی انجینئروں نے ڈیزائن کیا تھا۔ الخالد کا وزن 48 ٹن اور اس میں 12 سو ہارس پاور کا انجن لگا ہوا ہے۔ الخالد میں لگی ہوئی توپ دو کلو میٹر کے فاصلے پر حرکت کرتی ہوئی چیزوں کو نشانہ بناسکتی ہے۔

اس ٹینک میں‌ طیارہ شکن توپ بھی نصب ہے۔ الخالد کے 65 فی صد پرزے ملک میں تیار کیے گئے تھے اور ٹینک پر 15 لاکھ ڈالر لاگت آئی تھی۔ ٹینک کی تیاری کے منصوبے کی تکمیل میں تین سال لگے۔ جنگ کے میدان میں‌ جہاں ہمارے شیر دل جوان ہر محاذ پر پیش قدمی کرتے ہیں، وہیں جدید ٹیکنالوجی پر مشتمل مختلف ہتھیار اور مشینیں بھی ان کی مدد گار ہوتی ہیں اور الخالد ٹینک انہی میں سے ایک ہے۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.