کیپ ٹاؤن:بھارتی کرکٹرزپر2منٹ سےزائد نہانے پرپابندی

کیپ ٹاؤن:جنوبی افریقہ کے دورے پرموجود بھارتی کرکٹ ٹیم کو عجیب وغریب پابندی کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ تمام کھلاڑیوں سے کہا گیا ہے کہ کوئی بھی نہانے کے لیے دو منٹ سے زیادہ وقت نہیں لے گا۔

کھلاڑی عجیب مشکل میں پڑگئے۔ کیپ ٹاؤن میں پانی کی شدید قلت کے باعث کھلاڑیوں سے کہا گیا ہے کہ وہ دو منٹ سے زیادہ نہ نہائیں۔ پابندی یکم جنوری 2018 سے نافذالعمل ہے جب بھارت نے جنوبی افریقن ٹیم کیخلاف کیپ ٹاؤن میں پہلے ٹیسٹ میچ کا آغاز کیا تھا۔

یکم جنوری کو کیپ ٹاؤن میں جب کھلاڑی شام کو ہوٹل پہنچے تو اس وقت درجہ حرارت 27 ڈگری سینٹی گریڈ تھا، ہوٹل واپسی پر کھلاڑیوں کو پانی کی قلت کے پیش نظر باضابطہ طورپریہ درخواست موصول ہوئی کہ نہائیں تو بس دو منٹ کا وقت واش روم میں لگائیں اس سے زیادہ نہیں۔

ٹیم کے بہت سے کھلاڑیوں کا تعلق ایسے علاقوں سے ہے جہاں پانی کی قلت کا سامنا رہتا ہے لیکن کیپ ٹاؤن میں نہانے کے وقت پت بھی پابندی کچھ نئی ہی ہے۔

اس خبر سے بھارتیوں نے اپنے لیے کچھ اچھا بھی اخذ کرہی لیا۔ کہا جارہا ہے کہ کیپ ٹاؤن میں زیرزمین پانی کی سطح اتنی کم ہونے کا مطلب ہے کہ کم نمی اورخشک پچ جو بھارتی کرکٹرز کے لیے بہت اچھی بات ہے۔

واضح رہے کہ کیپ ٹاؤن میں پانی کی شدید قلت کے باعث وہاں کے رہائشی پانی کی مخصوص مقدار استعمال کرنے کے پابند ہیں۔ اس پابندی کے تحت ہر گھرانہ 10 ہزار 500 لیٹر ماہانہ یا 87 لیٹر فی شخص روزانہ پانی استعمال کرسکتا ہے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.