پاکستان میں فینسنگ کی ابتداء

تلوار بزاتِ خود ایک خطرناک چیز ہے صنف نازک کا تلوار سے کھیلنا کسی معجزے سے کم نہیں ۔۔۔ پاکستان میں فینسنگ کے کھیل سے زیادہ لوگ واقف نہیں، فینسنگ کیا ہے اس کے کیا اصول ہیں کتنا پرانا کھیل ہے پاکستان میں بیشتر لوگوں کو معلوم نہیں ہے، اولمپک کا یہ کھیل اب پاکستان میں آہستہ آہستہ مقبول ہونا شروع ہوا ہے، سندھ فینسنگ ایسوسی ایشن نے کھلاڑیوں کی صلاحیتیں جانچنے کےلئے کراچی میں سندھ انٹرڈویژن چیمپئن شپ کا اہتمام کیا۔ اس چیمپئن شپ میں ٹیلنٹ سامنے آیا، شمشیرزنی جیسے خطرناک کھیل میں مہارت دکھائی گئی اور تو اور خواتین نے ثابت کیا کہ وہ مردوں سے کسی طور کم نہیں، اٹلی، جرمنی، فرانس،امریکہ اور روس کے بعد پاکستان میں بھی فینسنگ کی مہارت رکھنے والے سامنے آگئے۔فینسنگ کے کھیل کا آغاز پندرہویں صدی میں ہوا، پہلی مرتبہ اٹھارہ سو چھیانوے میں اولمپکس میں شامل ہوا، اولمپکس مقابلوں میں فرانس ، اٹلی ، جنوبی کوریا ، امریکہ ، جاپان ، روس اور جرمنی کے کھلاڑی میڈل ٹیبل پر جگہ بناتے رہے ہیں، دوہزار سولہ میں ہونے والے ریو اولمپکس میں اڑتالس ممالک کے دو سو بارہ فینسرز شریک ہوئے، فینسنگ کی خواتین کیٹگری کو انیس سو چوبیس کے پیرس اولمپک میں شامل کیا گیا۔فینسنگ کا سامان دیگر کھیلوں کے مقابلے میں نسبتاَمہنگا ہے۔ کھیل کے لیے جیکٹ ، پینٹ، گلوز،جوتے،موزے، اور ماسک درکار ہوتا ہے سب سے اہم تلوارہے جس کا وزن پانچ سو گرام سے سات سو ستر گرام اور لمبائی نوے سے ایک سو دس سینٹی میٹرہوتی ہے، فینسنگ میں تین کیٹگری فوئل ، ایپے اور سیبرے میں مقابلے ہوتے ہیں۔ پاکستان میں اس وقت سیبرے فینسرز کو سیکھایا جارہاہے ۔ سیبرےمیں پوائنٹ کے لئے کھلاڑی حریف کے جسم کے اوپر والے حصے کو نشانہ بناتا ہے۔ کھیل خطرناک ہے لیکن لڑکیاں بھی خطروں کی کھلاڑی بننے کےلئے تیار ہیں۔ پاکستان میں فینسنگ کے فروغ کے لئے وسائل کم اور اسپانسرز نہ ہونے کے برابر ہیں۔ اس لیے کھیل کے فروغ میں بھی مشکلات کا سامنا ہے ۔سندھ فینسنگ ایسوسی ایشن کے عہدیداران کوششوں میں لگے ہیں کہ فینسنگ کوزیادہ سے زیادہ سرپرستی حاصل ہو تاکہ فینسنگ کا کھیل پاکستان میں مقبول ہوسکے اور باصلاحیت نوجوان اس کھیل میں آگے آئیں۔ اپنی صلاحیتوں کے جوہر دکھائیں اور عالمی سطح پراس کھیل میں ملک کا نام روشن کریں اور یہ کوئی مشکل نہیں۔ اس کھیل میں مہارت حاصل کرنے والی لڑکیوں کو دیکھ کر بآسانی کہا جا سکتا ہے کہ

ذرا نم ہو یہ مٹی بڑی زرخیز ہے ساقی


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.