اللہ تعالیٰ کا وہ اسم مبارک جس کی قوت تسخیراور خاصیت کا علم ہوجائے تو کوئی بھی کمزور انسان اسکواپنی تسبیح بنانے سے نہیں رک سکے گا

انسان ہمیشہ سے کسی ایسے عمل اور وظیفے کی تلاش میں رہتا ہے جو نہایت آسان بھی ہو اور اس کے لئے اسکو چلّوں اور دوسری مشقتوں کی بھی ضرورت نہ پڑے تو ہم آپ کو یہ بتاتے ہیں کہ ہر ایک وہ مسلمان جو خلوص نیت سے اللہ کریم کے اسمائے مبارکہ میں سے کسی کا بھی ذکر وتسبیح کرتا ہے اور لگاتار تسبیحات میں مصروف رہتا ہے اس پر زمانے کی مشکلات اس طرح نہیں ٹوٹ کر گرتیں جیسے دوسروں پر۔وہ اللہ کی پناہ میں رہتا ہے۔کمزور انسان جس پر دنیا مالی و اخلاقی طور پر ظلم کرتی ہے،اسکا معاشرے میں کوئی سجن نہیں ہوتا تو وہ اللہ کریم کے اسم مبارکہ یا مھیمن کا روزانہ پانچ ہزار بار ذکر کیا کرے،اوّل آخر درود پاک کے ساتھ ۔
یا مھیمن میں ہیبت ،جلال اور تسخیر کی ایسی قوت پائی جاتی ہے کہ ہر کوئی اس کے ذاکر کے ساتھ نرم رویہ اختیار کرتا ہے۔ اگر کسی کو معلوم ہوجائے کہ یا مھیمن کی قوت اور خاصیت کیا ہے تو وہ ساری زندگی یا مھیمن کا ذکر کرتے بسر کردے ۔ایسا انسان نیک نیت ہواور جائز کام کرنا چاہتا ہوتو اسے یا مھیمن کا ذاکرو عامل بنناچاہئے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.